0
Tuesday 25 Jun 2019 22:01

سندھ کے دو لاکھ گھروں کو شمسی توانائی سے بجلی فراہم کی جائے گی، امتیاز احمد شیخ

سندھ کے دو لاکھ گھروں کو شمسی توانائی سے بجلی فراہم کی جائے گی، امتیاز احمد شیخ
اسلام ٹائمز۔ سندھ کے دو لاکھ گھروں کو شمسی توانائی کے ذریعے بجلی فراہمی کے منصوبے کا جائزہ لینے کے لئے ایک اجلاس سندھ کے وزیر توانائی امتیاز احمد شیخ کی زیر صدارت ان کے دفتر میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں وزیر توانائی سندھ کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ پاکستان پیپلز پارٹی کے عوامی خوشحالی اور خود انحصاری کے لئے کئے جانے والے اقدامات کے تحت سندھ کے دو لاکھ گھروں کو شمسی توانائی سے روشن کرنے کے منصوبے میں 30 ملین امریکن ڈالر کی لاگت آئے گی، اس منصوبے میں ورلڈ بینک کا تعاون شامل ہے اور یہ منصوبہ پانچ سال میں مکمل ہوگا، منصوبے کے تحت فی گھر ایک پنکھا چلانے اور دو بلب روشن کرنے لئے شمسی توانائی کا سیٹ اپ لگایا جائے گا، ابتداء میں یہ منصوبہ سندھ کے دس اضلاع سجاول، بدین، تھرپارکر، عمرکوٹ، خیرپور، سانگھڑ، گھوٹکی، کشمور، جیکب آباد اور قمبر شہدادکوٹ پر محیط ہے۔

بریفنگ میں بتایا گیا کہ منصوبے کے تحت فی فیملی ایک پنکھا اور دو بلب کی فراہمی کے لئے بہت معمولی رقم بھی معمولی قسطوں کی صورت میں لی جائے گی، تاکہ فیملی کو اپنی اونر شپ کا احساس رہے اور ہر فیملی اپنے شمسی یونٹ کی دیکھ بھال میں دلچسپی لے اور اپنے شمسی یونٹ کا خیال رکھے۔ صوبائی وزیر امتیاز احمد شیخ نے کہا کہ سندھ حکومت اپنے صوبے کے عوام کی خوشحالی اور معیار زندگی کو بلند کرنے کے منصوبوں پر عمل پیرا ہے۔ انہوں نے ہدایات دیں کہ گھروں کو شمسی توانائی سے روشن کرنے کے منصوبے کو باقی اضلاع تک بڑھانے کے لئے بھی تجاویز جلد پیش کی جائیں تاکہ صوبے کے عوام کو سستی بجلی کی آسانی فراہم کی جاسکے۔ انہوں نے منصوبے پر جلد عملدرآمد کے لئے بھی ضروری ہدایات دیں۔
خبر کا کوڈ : 801496
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے