0
Friday 12 Jul 2019 10:40

کشمیری پنڈتوں کی وطن واپسی انسانی مسئلہ ہے، میرواعظ عمر فاروق

کشمیری پنڈتوں کی وطن واپسی انسانی مسئلہ ہے، میرواعظ عمر فاروق
اسلام ٹائمز۔ جموں و کشمیر کل جماعتی حریت کانفرنس (م) کے چیئرمین میرواعظ عمر فاروق نے پنڈتوں کی وطن واپسی کو یقینی بنانے کے لئے آنے والے دنوں میں علماء، تاجر، سول سوسائٹی اور پنڈتوں پر مشتمل کمیٹی تشکیل دینے کا عندیہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر سے ہجرت کرچکے پنڈتوں کو وادی واپس لانے کے لئے اعتماد سازی کے اقدامات کئے جائیں گے۔ میرواعظ عمر فاروق نے بتایا کہ حال ہی میں منعقدہ میلہ کھیر بھوانی کے موقعہ پر پنڈت برادری سے وابستہ لوگوں نے انکے ساتھ ملاقات کرتے ہوئے اپنی وطن واپسی کیلئے بحثیت میرواعظ اپنی ذمہ داری ادا کرنے پر زور دیا۔ میرواعظ عمر نے کہا کہ پنڈتوں کی واپسی ایک انسانی مسئلہ ہے اور اس سلسلے میں پیش رفت وقت کی اہم ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا ماننا ہے کہ کشمیری پنڈتوں کی وطن واپسی کو کشمیر مسئلے کے زاویے سے نہ دیکھا جائے بلکہ یہ سراسر ایک انسانی مسئلہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ میٹنگ کے دوران کشمیری پنڈتوں نے واضح کردیا کہ وہ علیحدہ کالونیوں میں رہنے کے روادار نہیں ہیں بلکہ مسلمان بستیوں میں اپنے بھائیوں کے شانہ بشانہ زندگی گزارنے پر رضامند ہیں۔ میرواعظ نے کہا کہ ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ ہم پنڈت برادری کی وطن واپسی کو یقینی بنانے کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دیں گے جس میں علماء، سول سوسائٹی، تاجروں کے علاوہ پنڈت برادری سے وابستہ لوگ شامل ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ کمیٹی ہر ایک طبقے کے ساتھ ملاقات کرے گی اور پنڈتوں کی وطن واپسی کے لئے راہ ہموار کرنے میں اپنا کردار ادا کرے گی۔ اس موقعہ پر میرواعظ عمر فاروق نے نیوز روم میں بیٹھے چند عناصر پر برستے ہوئے کہا کہ وہ لوگ کشمیری پنڈتوں کا کیس کمزور کرنے پر تلے ہوئے ہیں جو کہ بدقسمتی کی بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم کشمیری پنڈتوں کی وطن واپسی میں کوئی سیاسی فائدہ سمیٹنا نہیں چاہتے اور نہ ہمیں اس کے عوض ووٹوں کی ضرورت ہے، ہم اپنی طرف سے بھرپور کوشش کریں گے۔
خبر کا کوڈ : 804577
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب