0
Wednesday 7 Aug 2019 22:30

غیر ملکی سفارت خانے سے پیسے لینے کا الزام، طاہر اشرفی کو گرفتار کیے جانے کا امکان

غیر ملکی سفارت خانے سے پیسے لینے کا الزام، طاہر اشرفی کو گرفتار کیے جانے کا امکان
اسلام ٹائمز۔ اسلامی نظریاتی کونسل کے رکن طاہر اشرفی کو گرفتارکیے جانے کا امکان ہے، طاہراشرفی پر غیرملکی سفارتخانے سے پیسے لینے کاالزام ہے۔ تفصیلات کے مطابق اسلامی نظریاتی کونسل کے رکن طاہر اشرفی کا نام ایف آئی اے کی اسٹاپ لسٹ میں شامل ہیں، علامہ طاہراشرفی کو گرفتارکیے جانے کا امکان ہے۔ یاد رہےایف آئی اے انسداد دہشت گردی ونگ نے چیئرمین علما کونسل طاہر اشرفی کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کررکھا ہے۔  طاہر اشرفی کے خلاف کاٹی گئی ایف آئی آر میں کہا گیا کہ ان کے بینک اکاؤنٹ میں کروڑوں روپے کی غیرملکی فنڈنگ ہوئی، یہ فنڈنگ ناروے کے چرچ اور جرمن سفارت خانے کی جانب سے کی گئی، خدشہ ہے کہ طاہر اشرفی کو ملنے والی رقم دہشت گردی میں استعمال کی جاسکتی ہے۔ طاہر اشرفی کے خلاف مقدمہ ایف آ ئی اے نے ایف اے ٹی ایف کے تحت درج کیاہے۔

 واضح رہے کہ سال 2017 کی ایک دستاویز کے مطابق پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین طاہر اشرفی نے ایک امریکی این جی اوز سے 90 ہزار ڈالر اور جرمن سفارت خانے سے 43 لاکھ روپے وصول کیے، جس کی دستاویزات منظرعام پر آگئیں، جبکہ طاہراشرفی نے اس وقت اس کی تردید کردی تھی۔ اطلاعات کے مطابق پاکستان علماء کونسل کے چئیرمین طاہر اشرفی نے دہشت گردی کے رحجانات کے خاتمے کی مد میں امریکی این جی او آئی سی آر ڈی سے 90 ہزار ڈالر لیے، امریکی این جی او سے جو رقم وصول کی گئی وہ پاکستانی کرنسی میں آج کے حساب سے تقریبا 94کروڑ روپے سے زائد بنتی ہے۔ علاوہ ازیں طاہراشرفی نے مبینہ طور پر سوشل میڈیا اور دینی مدارس میں دہشت گردی کے رحجانات کی مانیٹرنگ کے لیے جرمن سفارت خانے سے بھی رقم وصول کی، کیولری گراؤنڈ کے نجی بینک اکاؤنٹ میں ان کے لیے 43 لاکھ 44 ہزار روپے کی فنڈنگ جمع کرائی گئی۔
خبر کا کوڈ : 809457
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب