0
Saturday 17 Aug 2019 21:45

راج ناتھ کی دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں، سراج الحق

راج ناتھ کی دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں، سراج الحق
اسلام ٹائمز۔ امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ مودی نے تباہی اور بربادی کا رستہ چنا ہے، ایٹمی اسلحہ چلانے میں پہل کرنیوالا پہلے خود جلے گا، راج ناتھ کی دھمکیوں سے ڈرنے والے نہیں، اقلتیں سمجھ رہی ہیں کہ وہ انڈیا میں محفوظ نہیں، مودی کا زوال شروع ہو چکا ہے، ہندوستان کے اندر ایک نیا پاکستان بنے گا اور پسے ہوئے طبقے کو ہندوؤں کے ظلم و جبر اور استحصالی نظام سے نجات ملے گی، حکومت ایل او سی پر لگی باڑ کو گرائے اور بھارت کیساتھ سابقہ معاہدے ختم کیے جائیں، طویل عرصہ کے بعد مسئلہ کشمیر پر سلامتی کونسل کا اجلاس ہو رہا ہے اور بالآخر دنیا نے اس حقیقت کو تسلیم کیا ہے کہ بھارت نے کشمیر پر ناجائز قبضہ کرکے کشمیریوں کے انسانی حقو ق غصب کر رکھے ہیں۔

سراج الحق کا کہنا تھا کہ ہندوستان کے دو سو سے زائد دانا بینا لوگوں نے بھارتی سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کر دی ہے کہ آرٹیکل 370 اور -A 35 کو بحال کیا جائے، حکومت کشمیر کی آزادی کیلئے جو قدم بھی اٹھائے گی جماعت اسلامی اس کے قدم کیساتھ قدم ملائے گی، حکومت شملہ معاہدہ کو اٹھا کر بھارت کے منہ پر مارے، کشمیریوں کی شرکت کے بغیر مسئلہ کشمیر پر ہونیوالے مذاکرات کامیاب نہیں ہو سکتے، مسئلہ کشمیر کے اصل فریق خود کشمیری ہیں، کشمیر کے مسئلہ پر پاکستانی قوم متحد ہے، سیاسی جماعتوں نے اپنی معمول کی سرگرمیاں ترک کرکے کشمیریوں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے پروگرام کئے ہیں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ایل او سی پر شہید ہونیوالے تیمور اسلم کے گھر شہید کے والدین سے اظہار تعزیت کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات جماعت اسلامی پاکستان قیصر شریف بھی موجود تھے۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ چودہ روز سے کشمیر میں کرفیو نافذ ہے، بھارتی فوج نے کشمیر میں بنیادی انسانی حقوق غصب کر رکھے ہیں، تعلیمی ادارے بند ہیں، کشمیر جیل خانہ بن گیا ہے، تیمور اسلم اور ان کے ساتھیوں کی شہادت نے کشمیریوں کو نیا جذبہ اور حوصلہ دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسا کوئی اسلحہ نہیں جو ایمان کا مقابلہ کر سکے، کشمیر بھارتی فوجوں کا قبرستان بنے گا اور شہداء کے پاک خون سے کشمیر ضرور آزاد ہو گا، کشمیر کے متعلق مودی کے احمقانہ اقدامات کو خود بھارت کے سنجیدہ حلقوں نے مسترد کر دیا ہے۔

سراج الحق نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ہماری خارجہ پالیسی کی ناکامی کا ایک تسلسل ہے، ماضی کی حکومتوں نے کشمیر کا مسئلہ حل کرنے کی بجائے بھارت کیساتھ تجارت کی، واجپائی اور مودی کا ریڈ کارپٹ پر استقبال کیا گیا، آلو پیاز اور ٹماٹر کی تجارت جاری رہی جو خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پلوامہ واقعہ کے بعد بھارتی طیارے کو ہمارے شاہینوں نے مار گرایا لیکن اڑتالیس گھنٹوں میں ہی بھارتی پائلیٹ کو واپس کر دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ امت مسلمہ کی قیادت پاکستان اور ترکی کو کرنا چاہئے، اکثر اسلامی ممالک بے بسی کا اظہار کر رہے ہیں، او آئی سی کی قیادت کرنیوالے اپنی ذمہ داری کرتے تو آج کشمیر اور فلسطین جیسے مسائل نہ ہوتے۔ قبل ازیں سراج الحق نے شہید تیمور کے والدین سے اظہار تعزیت کیا اور شہداء کی بلندی درجات اور خاندانوں کیلئے صبر جمیل اور استقامت کی دعا کی۔
خبر کا کوڈ : 811160
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب