0
Wednesday 21 Aug 2019 23:43

علی زیدی نے نارتھ کراچی کے صنعتکاروں سے تجاویز مانگ لیں، وزیراعظم کو پیش کریں گے

علی زیدی نے نارتھ کراچی کے صنعتکاروں سے تجاویز مانگ لیں، وزیراعظم کو پیش کریں گے
اسلام ٹائمز۔  وفاقی وزیر بحری امور سید علی حیدر زیدی نے نارتھ کراچی کے صنعتکاروں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی یقین دہانی کرواتے ہوئے نکاٹی سے تجاویز مانگی لی ہیں جو وہ خود وزیراعظم عمران خان کو پیش کریں گے، جبکہ ایف بی آر سے متعلق مسائل کے حل کے لئے چیئر مین شبر زیدی کے ساتھ اجلاس بلانے کی بھی یقین دہانی کروائی ہے تاکہ صنعتی سرگرمیوں کو فروغ دیا جاسکے۔ یہ بات انہوں نے نارتھ کراچی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری (نکاٹی) میں اجلاس سے خطاب میں کہی۔ اس موقع پر نکاٹی کے سرپرست اعلیٰ کیپٹن اے معیز خان، صدر سید طارق رشید، سینئر نائب صدر اظفر حسین، نائب صدر فیصل شابو، سابق صدر سید عثمان علی، نکاٹی کے سی ای او صادق محمد، چیئرمین بورڈ فراز مرزا، اداکار عدنان صدیقی بھی اجلاس میں شریک تھے۔ وفاقی وزیر علی زیدی نے ”صاف کراچی“ مہم کو ہر صورت کامیاب بنانے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے اپیل کی کہ کراچی کو اپنا سمجھ کر اسے صاف ستھرا رکھنے میں اپنا کردار ادا کریں، کیونکہ جنہوں نے 11 سالوں میں کچھ نہیں کیا انہوں نے اگلے 11 برسوں میں بھی کچھ نہیں کرنا لہٰذا جو کچھ کرنا ہے آپ نے کرنا ہے۔

انہوں نے نارتھ کراچی صنعتی ایریا میں جی ٹی ایس سے کچرا نہ اٹھانے کا نوٹس لیتے ہوئے اگلے 2 دنوں میں لینڈ فل سائیڈ پر منتقل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ ہم سندھ حکومت سے یہ پوچھ کر تھک گئے کہ کچرا نہیں اٹھانا تو نہ اٹھائیں مگر اتنا تو بتادیں کہ جی ٹی ایس اور کچرا کنڈیاں کہاں ہیں؟ مگر افسوس سندھ حکومت نے کچرا پھینکنے کے لئے غلط جگہوں کی نشاندہی کی، ہم سمجھے کہ سندھ حکومت ہماری مدد کرے گی لیکن جب ہم نے نالوں کی صفائی کروائی اورکچرا اٹھانے کی باری آئی تو سندھ حکومت پیچھے ہٹ گئی اور اس کی ذمہ داری بھی ہم پر ڈال دی گئی، مگر ہم پیچھے ہٹنے والے نہیں، سندھ حکومت کچرا ڈالنے کے لئے درست مقامات کی نشاندہی کردے باقی کام ہم خود کرلیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جو پہلے وزیر بلدیات تھے اب وزیر اطلاعات ہیں ان کی گلی ایسی چمک رہی ہے جیسے لندن جیسی ہو۔ انہوں نے مزید کہا کہ کنوٹمنٹ علاقے اور سوسائٹیز اپنا کچرا خود لینڈ فل سائیڈ پر ڈالیں جبکہ دفعہ 144 نافذ کی جائے اور جو بھی شہر کو گندا کرے اس پر جرمانے کئے جائیں تاکہ لوگوں کو یہ ترغیب دی جاسکے کہ وہ اس شہر کو اپنا سمجھتے ہوئے صاف ستھرا رکھیں۔
خبر کا کوڈ : 811934
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب