0
Wednesday 18 Sep 2019 16:23

انٹرویو کے دوران نیتن یاہو کا احمقانہ اقدام، عالمی سطح پر غاصب صیہونی رژیم کی جہالت عیاں

انٹرویو کے دوران نیتن یاہو کا احمقانہ اقدام، عالمی سطح پر غاصب صیہونی رژیم کی جہالت عیاں
اسلام ٹائمز۔ غاصب صیہونی رژیم اسرائیل کے وزیراعظم جو آجکل اسرائیل میں ہونیوالے الیکشنز میں اپنی گرتی شہرت کو سنبھالنے میں ناکام نظر آتے ہیں، اپنے احمقانہ اور جاہلانہ اقدام کیوجہ سے ایک مرتبہ پھر عالمی سطح پر رسوائی کا شکار ہوگئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق بنجمن نیتن یاہو تب عالمی سطح پر ہنرمند اور دانشمند طبقے کی شدید تنقید کا شکار ہوئے، جب انہوں نے اپنی حماقت کیوجہ سے نیوز ویب سائٹ "واللا" کو دیئے گئے اپنے انٹرویو کے دوران "اسرائیل میں ہنر کی سو سالہ تاریخ" نامی کتاب کو اپنے جوتوں تلے رکھ لیا، جس پر ہونیوالے وسیع ردعمل میں دنیا بھر کے خبرنگار، ہنرمند اور دانشمند طبقے نے انکی تصویر پر طرح طرح کی رائے کا اظہار کرتے ہوئے متفقہ طور پر لکھا ہے کہ اس (جاہل) شخص سے اس کی حرکت پر جواب طلب کیا جانا چاہیئے۔
 اقدام عجیب نتانیاهو هنگام یک مصاحبه تلویزیونی +عکس
مذکورہ کتاب کے مصنف "جدعون عفرات" کا کہنا ہے کہ کوئی نہیں چاہتا کہ اس کو قدموں تلے روندا جائے، جبکہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ جس جگہ ادبی کتابیں یوں قدموں تلے روندی جائیں، وہاں دانشمند طبقہ بھی جوتوں تلے ہی روندا جائے گا۔ سوشل میڈیا پر بنجمن نیتن یاہو کی اس تصویر کے نشر ہونے سے نہ صرف عالمی سطح پر ہی بلکہ مقبوضہ فلسطین (اسرائیل) میں بھی ان کے خلاف اعتراضات اور تنقید کی ایک بڑی لہر نے جنم لیا ہے، جبکہ یہ تمامتر صورتحال ایک ایسے وقت میں رونما ہوئی ہے، جب بنجمن نیتن یاہو اپنی گرتی شہرت کے باوجود آئندہ انتخابات میں اپنا حالیہ مقام برقرار رکھنے کی جدوجہد میں طاقتور حریفوں کیساتھ روبرو ہیں۔
خبر کا کوڈ : 816911
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے