0
Friday 20 Sep 2019 15:52

اکادمی ادبیات پاکستان کے زیراہتمام اسلام آباد میں روحِ آزادیِ کشمیر کے عنوان سے تقریب کا انعقاد

اکادمی ادبیات پاکستان کے زیراہتمام اسلام آباد میں روحِ آزادیِ کشمیر کے عنوان سے تقریب کا انعقاد
اسلام ٹائمز۔ سیکرٹری برائے قومی تاریخ و ادبی ورثہ ڈویژن اور ممبر پارلیمانی کمیٹی برائے کشمیر غزالہ سیفی نے اکادمی ادبیات پاکستان کے زیر اہتمام تقریب اظہارِ یکجہتی، روحِ آزادیِ کشمیر میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان دنیا کے تمام فورمز پر کشمیریوں کی آواز پہنچا رہا ہے، وزیراعظم پاکستان اقوام متحدہ میں کشمیریوں کے سفیر بن کر جارہے ہیں اور وہاں اُن کے حق میں آواز بلند کریں گے۔ اس موقع پرافتخار عارف نے کہا کہ ہم پاکستان کے تمام اہل قلم چاہے وہ کسی بھی زبان کے ہوں کشمیری عوام کے حق خود اختیاری کے بارے میں یکساں موقف رکھتے ہیں، ہم سب کشمیری عوام کی مسلسل جدوجہد کی مکمل حمایت کرتے ہیں، بھارتی حکو مت کی فرقہ وارانہ سیاست کے تحت کشمیرمیں کشمیری عوام کے بنیادی حقوق سلب کرنے کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم اقوا م متحدہ اور انسانی حقوق کی دوسری بین الاقوامی تنظیموں سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ کشمیرکی آزادی کی جدوجہدمیں مظلوم عوام کا ساتھ دیںا اور ان کے بنیادی حقوق کو بحال کرانے میں عالمی سطح پر احتجاج کریں۔ افتخار عارف نے کہا کہ پاکستان کی تمام سیاسی جماعتیں، پوری قوم اور عام لکھنے والے کشمیر کے عوام کی آزادی کے حق کی حمایت کرتے ہیں، قیام پاکستان کی تحریک اس وقت تک نامکمل سمجھتے ہیں، جب تک کشمیری عوام کو ان کا حق خودارادیت حاصل نہیں ہو جاتا۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم لکھنے والوں سے یہ بھی اپیل کرتے ہیں کہ وہ اور زیادہ توجہ اور لگن کے ساتھ کشمیریوں کی تحریک آزادی کی حمایت میں عالمی و قومی سطح پر آواز بلند کریں، عالمی سطح کے اہل قلم سے توقع رکھتے ہیں کہ کشمیر میں انسانی حقو ق کی پامالی کے خلاف اور ان کے حق خودارادیت کے لیے آواز بلند کریں۔

غزالہ سیفی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو جس طرح سے ہم نے پوری دنیا میں تمام تر سچائی کے ساتھ اُجاگر کیا ہے، پاکستان کی پوری تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی، اب تو بھارتی سپریم کورٹ نے بھی حکم جاری کردیا ہے کہ مودی سرکار مقبوضہ کشمیر سے فوری طور پر کرفیو ختم کریں اور کشمیریوں کی معمول کی زندگی بحال کرے۔ انہوں نے کہا کہ یہ پاکستانی موقف کی بھر پور حمایت ہے۔ انہوں نے کہا کہ یورپی پارلیمنٹ نے کشمیریوں کے حوالے سے انتہائی حوصلہ افزاء بحث کی ہے اور مقبوضہ کشمیر کی صورت حال پر تشویش کا اظہار کیا ہے، آج پوری دنیا میں مودی کا سفاک چہرہ بے نقاب ہوگیا ہے۔ پروفیسر مقصود جعفری نے کہا کہ بھارتی وزیراعظم اس دور کا ہٹلر ہے۔ وہ متعصب اور انتہاپسند ہندو ہے اس نے بھارت کے ٹکڑے ٹکڑے ہونے کی بنیاد رکھی ہے۔
خبر کا کوڈ : 817313
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب