0
Wednesday 9 Oct 2019 20:32

کراچی میں بڑھتے ہوئے جرائم حکومت اور متعلقہ اداروں کیلئے لمحہ فکر ہے، حافظ نعیم الرحمٰن

کراچی میں بڑھتے ہوئے جرائم حکومت اور متعلقہ اداروں کیلئے لمحہ فکر ہے، حافظ نعیم الرحمٰن
اسلام ٹائمز۔ جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا ہے کہ شہر کراچی میں پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری کے باوجود بڑھتے ہوئے جرائم، مسلح ڈکیتی و لوٹ مار کی وارداتیں انتہائی تشویش ناک اور حکومت اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کیلئے لمحہ فکر اور ان کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہیں۔ کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے حافظ نعیم الرحمٰن نے کہا کہ کراچی شہر میں مسلح ڈکیتی کی وارداتیں اچانک بڑھ گئی ہیں، ان وارداتوں میں گزشتہ دنوں ایک طالبہ اور قانون نافذ کرنے والے ادارے کا ایک اہلکار اپنی جان بھی گنوا بیٹھے ہیں، جبکہ اخباری اطلاعات کے مطابق بعض وارداتوں میں خود پولیس اہلکار بھی ملوث پائے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس قسم کی بڑھتی ہوئی وارداتوں سے عام شہریوں کے اندر خوف و ہراس اور عدم تحفظ کا احساس بھی پیدا ہو رہا ہے، جبکہ دوسری طرف تاجر اور کاروباری طبقات بھی شدید بے چینی اور اضطراب کا شکار ہیں۔

حافظ نعیم الرحمن نے کہا کہ ان حالات میں جبکہ ملک کی معیشت اور کاروباری طبقات شدید دباﺅ اور بحران کا شکار ہیں، امن و امان کی یہ صورتحال حالات کو مزید سنگین بنانے کا باعث بن رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایڈیشنل آئی جی کراچی کی جانب سے صرف یہ کہہ دینا کافی نہیں کہ زیادہ تر جرائم نشئی افراد کر رہے ہیں، اگر منشیات کے عادی لوگ بھی جرائم کر رہے ہیں تو ان کو روکنا، گرفتار کرنا اور قانون کے مطابق ان کے خلاف کارروائی کرنا بھی محکمہ پولیس کی ہی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہا کہ بڑھتے ہوئے جرائم اور چوری و ڈکیتی کی وارداتوں کی روک تھام کیلئے حکومت، پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو پہلے سے زیادہ متحرک اور مستعد ہونا چاہیئے۔
خبر کا کوڈ : 821111
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے