0
Thursday 31 Oct 2019 11:22

پشاور، شادی کرانے سے انکار پر بیٹیوں نے باپ کو قتل کر دیا، دونوں بہنیں گرفتار

پشاور، شادی کرانے سے انکار پر بیٹیوں نے باپ کو قتل کر دیا، دونوں بہنیں گرفتار
اسلام ٹائمز۔ دو بہنوں نے پسند کی شادی کی اجازت نہ ملنے پر اپنے والد کو گولی مار کر قتل کر دیا، پولیس نے دونوں بہنوں کو گرفتار کر لیا، ملزمان لڑکیوں نے اعتراف جرم کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق پشاور کے مضافاتی علاقے لڑمہ میں خزانہ تھانے کی حدود میں 6 دن قبل دو بہنوں نے اپنے والد کو محض اس بات پر فائرنگ کر کے موت کی نیند سلا دیا کہ وہ ان کی پسند کی شادی میں رکاوٹ تھا۔ مقتول مشتاق کی عمر 55 سال کے لگ بھگ بتائی جاتی ہے، بڑی بیٹی منیر نام کے شادی شدہ شخص سے شادی کرنا چاہتی تھی، انکار پر چھوٹی بہن کے ذریعے باپ کو قتل کروا دیا۔ مقتول مشتاق احمد کے بیٹے عبد اللہ نے پولیس اسٹیشن میں رپورٹ درج کروائی تھی کہ ان کے والد نے نامعلوم وجوہات کی بناء پر خودکشی کر کے اپنی زندگی کا خاتمہ کر لیا۔

پولیس نے ابتدائی تفتیش کی تو پتہ چلا کہ شاید یہ خودکشی نہیں ہے بلکہ قتل ہے، پولیس کی جانب سے مزید تفتیش کی گئی اور مقتول کی دو بیٹیوں خاتمن اور صابیہ کے بیانات قلمبند کئے گئے تو اس سے یہ بات سامنے آئی کہ مشتاق احمد نے خودکشی نہیں کی بلکہ انہیں قتل کیا گیا اور بعد میں ان کی دونوں بیٹیوں نے اس قتل کا اعتراف بھی کر لیا۔ پولیس کے مطابق مقتول مشتاق آٹو رکشہ چلا کر اپنے بیوی بچوں کا پیٹ پالتے رہے، مقتول کی 22 سالہ بیٹی اور ملزمہ صابیہ پہلے سے شادی شدہ ایک شخص سے شادی کی خواہش مند تھی لیکن ان کے والد نے رشتہ دینے سے انکار کر دیا تھا۔ ملزمہ کی دوسری بہن 18 سالہ خاتمن جس نے پولیس کے مطابق اپنے والد پر گولی چلائی اور وہ اس کیس میں گرفتار بھی ہے، اپنی بہن کی حمایتی تھی اور اکثر اوقات اس شخص سے فون پر باتیں بھی کیا کرتی تھی۔
خبر کا کوڈ : 824834
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب