0
Tuesday 12 Nov 2019 20:18
گزشتہ 1 ماہ میں آٹھ لاپتہ شیعہ افراد بازیاب ہوچکے ہیں جو خوش آئند اقدامات ہیں

امام مہدی (عج) کی شان میں گستاخی کے مرتکب شخص کو نشان عبرت بناکر سزا دی جائے، علامہ باقر زیدی

امام مہدی (عج) کی شان میں گستاخی کے مرتکب شخص کو نشان عبرت بناکر سزا دی جائے، علامہ باقر زیدی
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے کہا ہے کہ حکومت جلوس کے راستوں پر تعمیراتی کاموں میں جان بوجھ کر تاخیر کر رہی ہے جس سے سازش کی بو آرہی ہے، ہم وفاقی و صوبائی حکومت کو متنبہ کرتے ہیں کہ اس سال رمضان المبارک سے قبل تعمیرات کو فوری مکمل کیا جائے اور نمائش چورنگی مرکزی جلوس عزاء کے پرانے روٹس کو بحال کیا جائے، وہ لاپتہ جو کسی جرم میں ملوث نہیں انھیں رہا کیا جائے، امام مہدی (عج) کی شان میں گستاخی کے مرتکب شخص کو نشان عبرت بناکر قرار واقعی سزا دی جائے، اس گستاخی کے خلاف سندھ بھر بعد نمازِ جمعہ احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کو وحدت ہاؤس سولجر بازار کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر علامہ صادق جعفری، علامہ علی انور، علامہ نشان حیدر اور یعقوب حسینی سمیت دیگر رہنما موجود تھے۔ علامہ باقر عباس زیدی نے کہا کہ پاکستان میں مسلمانوں نے بغیر کسی تفریق کے پیغمبر ختمی مرتبت (ص) کی ولادت باسعادت کو انتہائی عقیدت اور مذہبی جوش و خروش سے مناکر یہ ثابت کیا ہے کہ حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ذات مقدس مسلمان اقوام کے مابین وحدت و اتحاد اور یکجہتی کا محور و مظہر ہے۔

علامہ باقر زیدی کا کہنا تھا کہ اس سال بھی امام خمینی (رح) کے فرمان کے مطابق اور مجلس وحدت مسلمین کے سربراہ علامہ راجہ ناصر عباس جعفری کی اپیل پر ملک بھر میں ہفتہ وحدت منایا جارہا ہے، مزید پروگراموں کا انعقاد کیا جائے گا جن میں تمام مسالک سے تعلق رکھنے والے مذہبی ہم آہنگی کا پرچار کرنے والی سیاسی و سماجی و مذہبی شخصیات کو مدعو کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ماہ محرم الحرام وصفر میں سندھ کے مختلف اضلاع میں جلوس عزاء کے روٹس حکومتی عدم توجہی کے باعث بدحالی کا شکار رہے، سڑکوں کی پیوندکاری کو بھی کروانا صوبائی حکومت نے مناسب نہیں سمجھا، ایسا لگتا ہے کہ حکومت جلوس کے ان راستوں پر تعمیراتی کاموں میں جان بوجھ کر تاخیر کر رہی ہے جس سے سازش کی بو آرہی ہے، ہم وفاقی و صوبائی حکومت کو متنبہ کرتے ہیں کہ رمضان المبارک سے قبل تعمیرات کو فوری مکمل کیا جائے اور نمائش چورنگی مرکزی جلوس عزاء کے پرانے روٹس کو بحال کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ عزاداری سید الشہداء ہمارا قانونی و آئینی حق ہے، اس کے خلاف کوئی سازش برداشت نہیں کریں گے، اضلاع میں عزاداروں کے خلاف ایف آئی آر درج کئے جانے کی شدید مذمت کرتے ہیں اور سندھ پولیس انتظامیہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ عزاداران امام حسین (ع) کے خلاف درج کئے گئے جھوٹے اور من گھڑت مقدمات کو فی الفور واپس لیا جائے۔

علامہ باقر عباس زیدی نے مزید کہا کہ چند نفرت انگیز عناصر دشمنان اسلام اور دشمنان پاکستان کے ناپاک عزائم کی تکمیل کے لئے یہاں فرقہ واریت کو فروغ دینا چاہتے ہیں، عبدالستار جمالی نامی شخص نے سوشل میڈیا پر امام مہدی (عج) کی شان میں گستاخی کی، قانون نافذ کرنے والے اداروں نے سندھ میں عوامی احتجاج پر اس گستاخ اہلبیت (ع) کو گرفتار کرلیا، امت مسلمہ کا امام مہدی علیہ السلام پر اعتقاد مسلکی نہیں مکمل اعتقاد ہے، ہم اعلیٰ عدلیہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ امام مہدی علیہ السلام کی شان میں گستاخی کرنے والے اسلام دشمن اور ملک دشمن عناصر کو نشان عبرت بناکر قرار واقعی سزا دی جائے، اس گستاخی کے خلاف جمعہ کو سندھ بھر میں  پور احتجاج کیا جائے گا۔ نماز جمعہ کے اجتماعات کے بعد احتجاجی مظاہرے کئے جائیں گے۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ لاپتہ شیعہ افراد کے اہل خانہ کی جانب سے اپنے پیاروں کی رہائی کی تحریک جاری ہے، گزشتہ 1 ماہ میں آٹھ لاپتہ شیعہ افراد بازیاب ہوچکے ہیں جو خوش آئند اقدامات ہیں، ہم امید کرتے ہیں کہ انشاء اللہ بہت جلد وہ افراد بھی جو کئی سالوں سے لاپتہ ہیں جن پر آج تک کوئی مقدمات نہیں بن پائے ہیں اور نہ ہی وہ ریاست کو کسی جرم میں مطلوب ہیں وہ بھی جلد از جلد بازیاب ہوکر اپنے پیاروں سے ملیں گے۔
خبر کا کوڈ : 827002
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے