0
Wednesday 13 Nov 2019 00:15

حکومت صوبہ ملتان کے حوالے سے کنفیوژن ختم کرکے واضح لائحہ عمل کا اعلان کرے، راو عبدالقیوم شاہین

حکومت صوبہ ملتان کے حوالے سے کنفیوژن ختم کرکے واضح لائحہ عمل کا اعلان کرے، راو عبدالقیوم شاہین
اسلام ٹائمز۔ تحریک صوبہ ملتان کے مرکزی چیئرمین راو عبدالقیوم شاہین نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے 100 دن میں صوبہ بنانے کا وعدہ کیا تھا ڈیڑھ سال گزرنے کے باوجود کوئی سنجیدگی نظرنہیں آرہی۔ اس حوالے سے کئی کمیٹیاں تشکیل دی گئیں مگر آج تک کسی بھی کمیٹی کا کوئی اجلاس تک منعقد نہیں ہوسکا۔ ملتان میں سب سیکرٹریٹ کے قیام کے لئے ابھی تک جگہ ہی دیکھی جا رہی ہے مگر اس حوالے سے سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں نہیں لیا گیا، ہم حکومت کو باور کرانا چاہتے ہیں کہ وہ صوبہ کے قیام کے حوالے سے موجود کنفیوژن کو ختم کرے اور واضح لائحہ عمل کا اعلان کرے۔ سب سیکرٹریٹ کا قیام کسی بھی طرح علیحدہ صوبے کا متبادل نہیں ہوسکتا، صوبے کے قیام کیلئے آئینی پیش رفت شروع کی جائے، ہم حکومت کو یہ بھی باور کرانا چاہتے ہیں کہ اس خطے کو علیحدہ صوبہ بنانے کا خواب اس خطے کے عوام نے دیکھا ہے اور یہ اپنے خواب کی تعبیر کیلئے ہر قسم کی قربانی دینے کو تیار ہیں۔ اس خطے کے عوام علیحدہ صوبہ کے قیام کے لئے کسی بھی قسم کے جھانسے میں نہیں آئیں گے، اگر حکمرانوں نے عوام کو اعتماد میں لئے بغیر فیصلے کئے یا کسی بھی لسانی، نسلی تعصب کی بنیاد پر صوبے کے قیام کی کوشش کی تو خطے کے عوام کی طرف سے بھرپور مزاحمت کا سامنا کرنا پڑے گا۔ اجلاس میں چوہدری شہزاد فیصل ارائیں، رکن الدین ملتانی، شاہ محمد خان ناصر، اشفاق ندیم ایڈووکیٹ، خواجہ محمد انور، ثقلین تھہیم، مسعود خالد علوی، ملک عمران یوسف اور دیگر نے شرکت کی۔
خبر کا کوڈ : 827060
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب