0
Saturday 16 Nov 2019 22:27

جے یو آئی (ف) نے قومی شاہراؤں کی بندش کیخلاف بلوچستان ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر دی

جے یو آئی (ف) نے قومی شاہراؤں کی بندش کیخلاف بلوچستان ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر دی
اسلام ٹائمز۔ جمعیت علمائے اسلام (ف) کی جانب سے قومی شاہراوں کو بلاک کرنے کے خلاف بلوچستان ہائیکورٹ میں آئینی درخواست دائر کردی گئی ہے۔ جمعیت علمائے اسلام (ف) کی جانب سے آزادی مارچ پلان بی کے تحت مختلف قومی شاہراؤں کی بندش کے خلاف بلوچستان ہائیکورٹ میں درخواست دائر کردی گئی۔ سلطان کاکڑ ایڈووکیٹ کی جانب سے دائردرخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ آئین پاکستان کے تحت شاہراؤں کی بندش غیر قانونی عمل ہے، جس سے شہریوں، مریضوں، ٹرانسپوٹرز کو شدید مشکلات کا سامنا ہے، آئینی درخواست میں پشتونخوامیپ، مسلم لیگ نون اور دیگر اپوزیشن جماعتوں، صوبائی حکومت کو بھی فریق بنایا گیا ہے۔ آئینی درخواست پر سماعت چیف جسٹس بلوچستان ہائیکورٹ پیر کو کرینگے۔ ادھر بلوچستان کے ضلع ژوب میں سلیازہ پل کے مقام پر جے یو آئی اور پشتونخوامیپ کے کارکنوں نے دھرنا دیکر قومی شاہراہ کو بلاک کر دیا۔ دھرنے کی قیادت مولانا احمد حریفال کررہے ہیں، دھرنے کے باعث ڈیرہ اسماعیل جانے والی ٹریفک معطل ہو گئی اور گاڑیوں کی بڑی بڑی قطاریں لگ گئیں، جس کی وجہ سے مسافروں اور شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ مظاہرین کا کہنا ہے کہ مرکزی قیادت کے کہنے تک احتجاج جاری رہے گا۔
 
خبر کا کوڈ : 827780
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب