0
Friday 22 Nov 2019 19:31

اشیائے خوردونوش کی بڑھتی قیمتیں عام آدمی کی دسترس سے باہر ہوتی جارہی ہیں، علامہ باقر زیدی

اشیائے خوردونوش کی بڑھتی قیمتیں عام آدمی کی دسترس سے باہر ہوتی جارہی ہیں، علامہ باقر زیدی
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے کہا ہے کہ اشیائے خوردونوش کی بڑھتی ہوئی قیمتیں عام آدمی کی دسترس سے باہر ہوتی جارہی ہیں، بڑھتی ہوئی مہنگائی پر قابو پانے کے لئے فوری اقدامات کی اشد ضرورت ہے، ایسے عناصر کے خلاف ذمہ دار اداروں کو فوری طور پر مؤثر کارروائی کرنا ہوگی جو اشیائے ضروریہ کی مصنوعی قلت پیدا کرکے عام آدمی کے لئے مشکلات کھڑی کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ روٹی کپڑا ہر آدمی کی بنیادی ضرورت ہے اور بنیادی ضروریات زندگی کی فراہمی ریاست کا فریضہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرمایہ دار طبقے کو ملکی معشیت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت حاصل ہے، تاجروں کو چاہیئے کہ وہ ملک و قوم کے مفادات کو سیاسی اور نظریاتی تعلقات پر مقدم رکھیں۔

علامہ باقر زیدی نے کہا کہ ذخیرہ اندوزی ایک قومی جرم ہی نہیں بلکہ گناہ بھی ہے، کسی دنیاوی شخصیت کی خوشنودی یا مفادات کے حصول کے لئے اللہ کو ناراض کرنا گھاٹے کا سودا ہے اور حقیقی مسلمان گھاٹے کا سودا نہیں کرتے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو بھی اس سلسلے میں سنجیدہ اقدامات کرنا ہوں گے، بڑھتی ہوئی مہنگائی حکومت کے انتظامی اقدامات کے حوالے سے سوال کھڑے کر سکتی ہے، موجودہ صورتحال متعلقہ اداروں کے فوری اور فعال کردار کا تقاضا کرتی ہے۔
خبر کا کوڈ : 828492
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب