0
Sunday 15 Dec 2019 21:12

متعصبانہ شہریت ایکٹ بھارت کی تباہی کا پروانہ ہے، اعجاز ہاشمی

متعصبانہ شہریت ایکٹ بھارت کی تباہی کا پروانہ ہے، اعجاز ہاشمی
اسلام ٹائمز۔ جمعیت علمائے پاکستان کے مرکزی صدر اور نائب صدر متحدہ مجلس عمل پیر اعجاز احمد ہاشمی نے کہا ہے کہ متعصبانہ شہریت ایکٹ بھارت کی تباہی کا پروانہ ہے، چھ بھارتی ریاستوں میں مسلسل احتجاج اور جلاو گھیراو سے واضح ہوگیا کہ مودی، خطے کے لئے ہٹلر سے زیادہ خطرناک ثابت ہوگا۔ متنازع قانون سازی کے ذریعے اقلیتوں کوعدم تحفظ کا شکار کیا جا رہا ہے ،اس سے واضح ہوتا ہے کہ انشااللہ بھارت ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگا اور مزید کئی پاکستان بھارت سے بنیں گے، اقلیتی عوام بھارت کے مظالم کا شکار ہیں، خاص طور پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے، کبھی بابری مسجد پر قبضہ کیا جاتا ہے تو کبھی گاو کشی کے نام پر مسلمانوں کا جینا حرام کر دیا جاتا ہے، حتیٰ کہ نچلی ذات کے ہندو بھی انتہا پسندوں کے مظالم کا شکار ہیں۔

لاہور میں جے یو پی کی میڈیا ٹیم سے گفتگو کرتے ہوئے پیر اعجاز ہاشمی نے کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ مذہبی رواداری کا ثبوت دیا اور اقلیتوں کا تحفظ کیا، یہاں ہندو اور سکھ یاتری اپنی عبادت گاہوں میں آتے جاتے رہتے ہیں اور پاکستان کے اندر رہنے والی اقلیتوں کو مکمل مذہبی آزادی ہے، مگر افسوس بھارت کے اندر اقلیتوں کیساتھ جانوروں سے بھی بدتر سلوک کیا جا رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بھارت کا رویہ تنگ نظر اور متعصبانہ ہے جس کا عالمی برادری کو نوٹس لینا چاہیے۔ 
خبر کا کوڈ : 832849
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش