0
Thursday 26 Dec 2019 23:50

بےنظیر بھٹو وفاقِ پاکستان کی سب سے مضبوط زنجیر تھیں جسے توڑنے کی سازش کی گئی تھی، بلاول بھٹو زرداری

بےنظیر بھٹو وفاقِ پاکستان کی سب سے مضبوط زنجیر تھیں جسے توڑنے کی سازش کی گئی تھی، بلاول بھٹو زرداری
اسلام ٹائمز۔ پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ شہید محترمہ بے نظیر بھٹو وفاقِ پاکستان کی سب سے مضبوط زنجیر تھیں اور ان کے قاتلوں نے درحقیقت اس زنجیر کو توڑنے کی سازش کی تھی، لیکن اس قومی سانحے کی فورا بعد صدر آصف علی زرداری نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگا کر ان مکروہ عزائم کو ناکام بنادیا۔ سابق وزیراعظم شہید محترمہ بے نظیر بھٹو کے 12 ویں یوم شہادت کے موقع پر انہیں شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے اپنے پیغام میں پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ پاکستان کی عوام اپنی اس بہادر قائد کو کبھی فراموش نہیں کرے گی، جنہوں نے اپنا سب کچھ اِس ملک، اس کے پسماندہ اور ننگے پاوں والے لوگوں کے لئے قربان کردیا۔

بلاول بھٹو زرداری نے مزید کہا کہ ایک بیٹی کی حیثیت سے انہوں نے اپنے والد و عوام میں انتہائی مقبول رہنما ذوالفقار علی بھٹو کے ان نظریات کے لئے جانفشانی سے مقابلہ کیا، جن کی خاطر ان کے والد نے پھانسی کے پھندے کو گلے لگایا تھا۔ انہوں نے وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کے جیالوں کو متحد کرکے ضیاء کی شکل میں موجود ایک سفاک آمر کے خلاف انتھک جدوجہد کی قیادت کی، بحالیِ جمہوریت کی جدوجہد کے دوران محترمہ بینظیر بھٹو کو قیدِ تنہائی اور جلاوطنی کی صعوبتیں برداشت کرنا پڑیں۔ پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ محترمہ بینظیر بھٹو نے آمریت کو شکست سے ہمکنار کیا اور انہیں انتھائی مجبوری کی حالت میں اقتدار سونپا گیا تھا، کیونکہ ضیاء باقیات 1988ء کے عام انتخابات کو مکمل طور پر ہائی جیک کرنے میں منہ کی کھانی پڑی تھی۔ انتخابات کے بعد، بطور وزیراعظم انہوں نے تمام سیاسی قیدیوں کی رہائی کا حکم دیا اور ملک و عوام کی ترقی کے لئے ترقیاتی پروگرام شروع کئے۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم بینظیر بھٹو نے صحت، تعلیم، غربت کے خاتمے، خواتین کی بہبود اور دفاع جیسے پروگراموں کو شروع کیا اور ملک کو ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن کردیا، بیلسٹک میزائل پروگرام نے اس جوہری پروگرام کی موجودگی میں ہمارے دفاع کو ناقابلِ تسخیر بنادیا، جس کی بنیاد ان کے والد ذوالفقار علی بھٹو نے اپنے عدالتی قتل ہونے سے پہلے رکھی تھی۔ بلاول بھٹو زرداری نے محترمہ بے نظیر بھٹو کے مشن سے تجدید عہد وفا کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ وہ پاکستان کی عوام اور پارٹی کارکنان کی حمایت سے یہ جدوجہد جاری رکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ محترمہ بینظیر بھٹو عوام کے دل و دماغ میں ہمیشہ زندہ و جاوید رہیں گی کیونکہ پاکستان کی تاریخ میں ان کی جمہوریت، انسانی حقوق اور پرامن معاشر کے لئے جدوجہد پر مبنی سیاسی ورثے کو کبھی فراموش نہیں کیا جائیگا۔
خبر کا کوڈ : 834991
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش