0
Thursday 19 Mar 2020 13:07

تفتان کیمپس میں متاثرین سے جانوروں سے بھی بدتر سلوک کیا جارہا ہے، متاثرین

تفتان کیمپس میں متاثرین سے جانوروں سے بھی بدتر سلوک کیا جارہا ہے، متاثرین
اسلام ٹائمز۔ ایران سے پاکستان پہنچنے والے سیکڑوں زائرین تفتان کے گندے قرنطینہ کیمپوں میں پھنسے ہیں جہاں محدود میڈیکل کیئر، فلش کے بغیر ٹوائلٹس اور گندا ماحول کورونا وائرس کے پھیلاؤ میں مددگار ثابت ہورہا ہے۔ فرانسیسی خبر رساں ایجنسی اے ایف پی سے گفتگو کرتے ہوئے تفتان کیمپس کے موجودہ اور سابق قرنطینہ کئے گئے افراد نے کہا کہ کیمپس میں متاثرین سے جانوروں سے بھی بدتر سلوک کیا جارہا ہے۔ نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پرموبائل فون کے ذریعے گفتگو کرتے ہوئے ایک متاثرہ شخص نے بتایا کہ میں گذشتہ 7 روز سے ایک ہی ماسک استعمال کررہا ہوں، جب مجھے یہاں لایا گیا تو اگر اس مجھے کورونا وائرس نہیں تھا تو اب کوئی حیران کن بات نہیں کہ اب مجھے کورونا ہوگیا ہے۔ ان کیمپوں میں بیمار اور صحت مند زائرین کو علیحدہ رکھنے کی کوئی کوشش نہیں کی گئی جو عملاً جانوروں سے بھی بدتر سلوک ہے۔ عینی شاہدین کا کہنا ہےکہ بہتر سہولتوں کیلئے کیمپوں میں قرنطینہ کئے گئے افراد نے مظاہرہ بھی کیا جبکہ بعض افراد وہاں سے فرار بھی ہوگئے۔
 
خبر کا کوڈ : 851290
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش