0
Thursday 26 Mar 2020 12:43
گندم کی بوری کی قیمت میں 1000 روپے اضافہ

کورونا اپڈیٹس، ملک میں متاثرین کی تعداد 1102 ہو گئی، 8 جاں بحق، 21 صحتیاب

کورونا اپڈیٹس، ملک میں متاثرین کی تعداد 1102 ہو گئی، 8 جاں بحق، 21 صحتیاب
اسلام ٹائمز۔ ملک بھر میں کورونا وائرس کے تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد 1102 تک پہنچ گئی ہے جب کہ وائرس سے 8 مریض جاں بحق اور 21 صحت یاب ہو چکے ہیں۔ وفاقی حکومت کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ملک بھر میں کورونا وائرس کے تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد 1102 تک پہنچ گئی ہے۔ سندھ میں اب تک 417، پنجاب میں 323، بلوچستان میں 131، گلگت بلتستان میں 84، خیبر پختونخوا میں 121 جب کہ اسلام آباد میں 25 اور آزاد کشمیر میں ایک مریض میں وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ کورونا وائرس کے باعث ملک بھر میں اب تک 8 افراد جاں بحق اور 21 صحت یاب ہوچکے ہیں جب کہ 5 افراد کی حالت تشویشناک ہے۔

کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال پر قومی رابطہ کمیٹی کا ایک اور اجلاس آج طلب کیا گیا ہے جس میں تمام وزرائے اعلیٰ ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کریں گے جب کہ اجلاس میں لاک ڈاون پر مشاورت ہوگی اور ٹرانسپورٹ کی بندش سمیت کورونا وائرس کی روک تھام کے حوالے سے اہم فیصلے ہوں گے۔ وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ افراتفری اور خوف پیدا نہیں ہونے دینا، لوگ ازخود احتیاط کریں، عوام کی آسانی کو یقینی بنانے کے لئے متعلقہ ادارے متحرک ہیں جب کہ اس وقت توجہ غریبوں کے راشن اور کھانے پینے کے انتظام پر ہے۔ سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ سید اویس قادر شاہ نے صوبے میں کرفیو لگانے کی تجویز پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ میں لاک ڈاؤن کے باوجود اس کی خلاف ورزی کی شکایات آرہی ہیں اور یہاں تک کہ دیہات میں اجتماعات منعقد کیے جارہے ہیں، اس لیے وزیر اعلیٰ سندھ سے گزارش کروں گا اور تجویز کروں گا کہ جتنے سخت اقدامات کرنا ہے کریں اگر کرفیو لگانا پڑتا ہے تو لگا دیں۔ 

کورونا وائرس کے باعث صوبہ پنجاب کے ضلع بھکر میں جزوی طور پر لاک ڈاؤن ہے۔ تاہم لاک ڈاؤن کے باعث ذخیرہ اندوزوں کی ملی بھگت کے باعث گندم مارکیٹ سےغائب ہوگئی جب کہ گندم کی 100 کلوگرام کی بوری میں اچانک 1000 روپے کا اضافہ ہو گیا ہے۔ قیمت میں اضافے کے بعد 3700 روپے والی 100 کلوگرام کی گندم کی بوری کی قیمت 4700 روپے ہو گئی ہے۔ اس کے علاوہ سبسڈی والا آٹا بھی مارکیٹ سے غائب ہے جس کے باعث شہری سخت مشکلات کا شکار ہیں۔ سرکاری آٹے کے 20 کلو گرام کے 3240 تھیلے مارکیٹ میں عوام کے نام پر آ رہے ہیں۔ شہریوں کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ ڈیلرز سرکاری آٹے کی تقسیم میں میرٹ کی خلاف ورزی کر رہے ہیں، چکی مالکان نے آٹے کا ریٹ 10 روپے بڑھا کر 54 روپے فی کلو کر دیا۔

مارکیٹ سے آٹا نہیں مل رہا لہذٰا چکی سے مہنگا آٹا خریدنے پر مجبور ہیں۔ شہریوں نے حکومت سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ آٹا بنیادی ضرورت ہے، قلت کا فوری نوٹس لیا جائے۔ جب کہ چکی مالکان کاکہنا ہے کہ گندم بلیک میں خرید رہے ہیں اس لئے آٹے کا ریٹ بڑھا۔ دوسری جانب ڈپٹی کمشنر بھکر آصف فرخ کا کہنا ہے کہ انتظامیہ نے گراں فروشوں کے خلاف کارروائی کا حکم دیا ہے، دریاخان سے ذخیرہ کیے گئے 50 کلوگرام کے 160 تھیلے گندم برآمد کیے گئے ہیں، شہریوں کو وافر آٹا کنٹرول ریٹ پر فراہم کرنے کے لئے متحرک ہیں۔
خبر کا کوڈ : 852706
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش