0
Saturday 16 May 2020 00:28

کراچی میں شرکائے جلوس کی گرفتاری سے سندھ حکومت کا چہرہ کھل کر سامنے آگیا، علامہ اقتدار نقوی

کراچی میں شرکائے جلوس کی گرفتاری سے سندھ حکومت کا چہرہ کھل کر سامنے آگیا، علامہ اقتدار نقوی
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین جنوبی پنجاب کے سیکرٹری جنرل علامہ اقتدار حسین نقوی نے کہا ہے کہ مولائے کائنات کی شہادت کے جلوس میں شرکت کرنا سندھ میں جرم بن گیا ہے، وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ بروز محشر رسول اللہ کو کیا جواب دو گے؟۔ ملتان سے جاری مذمتی بیان میں ایم ڈبلیو ایم جنوبی پنجاب کے سیکرٹری جنرل کا کہنا تھا کہ دفعہ 144کی پاداش میں دو سو سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا حالانکہ حکومت نے خود ایس او پیز جاری کی تھیں، کراچی میں عزاداروں کی گرفتاری اور اس کے بعد سیکیورٹی اداروں کی پھرتیاں ملک کو نئے بحران کی جانب دھکیل رہی ہیں، کراچی میں گرفتار کیے گئے افراد کو مسلسل ادھر اُدھر کیا جارہا ہے، ملنے نہیں دیا جارہا اور کھانا بھی نہیں دینے دیا جا رہا، ان گرفتاریوں کے بعد کراچی میں لاک ڈائون کا اضافہ اور سوموار تک اسے بڑھانے کے پیچھے منظم سازش ہے، حکومت سندھ اوچھے ہتھکنڈوں پر اُتر آئی ہے، سندھ حکومت یزیدی فعل پر اُتر آئی ہے، ملک بھر میں عزاداروں نے ماتمی جلوسوں کے دوران ایس او پیز کی پاسداری کی ہے لیکن سندھ حکومت شاید کچھ اور پلان کرچکی ہے، ہم حکومت سندھ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ فی الفور ان عزاداروں کو رہا کیا جائے۔
خبر کا کوڈ : 862931
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش