0
Wednesday 3 Jun 2020 12:27

کابل، گرین زون کی مشہور مسجد میں دھماکے کے نتیجے میں امام اور نمازی جاں بحق

کابل، گرین زون کی مشہور مسجد میں دھماکے کے نتیجے میں امام اور نمازی جاں بحق
اسلام ٹائمز۔ افغانستان کے دارالحکومت کابل کے گرین زون کی مشہور مسجد میں دھماکے کے نتیجے میں امام اور نمازی جاں بحق ہو گئے۔ یہ دھماکا ایک ایسے وقت ہوا ہے جب افغان دارالحکومت ملک کے شمالی علاقے میں حملے میں 7 شہری جاں بحق ہو گئے اور افغان حکام نے حملے کی ذمے داری طالبان پر عائد کی ہے۔ ابھی تک مسجد میں ہونے والے دھماکے کی ذمے داری کسی نے قبول نہیں کی۔ شہر کے محفوظ ترین علاقے میں ہونے والے اس دھماکے کی آواز دور دور تک سنئی گئی اور قریب ہی واقع سفارتخانوں اور بین الاقوامی دفاتر میں دھماکے بعد سائرن بجنے لگے اور عملہ محفوظ کمروں کی جانب روانہ ہو گیا۔ ملک کی وزارت داخلہ کے ترجمان طارق آریان نے خبر رساں ایجنسی اے ایف پی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بدقسمتی سے اس شام دہشت گردوں نے وزیر اکبر خان مسجد میں دھماکا خیز مواد کے ذریعے حملہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق یہ مسجد گرین زون کے داخلی دروازے پر واقع ہے اور اس انتہائی سیکیورٹی کے حامل علاقے میں واقع مسجد میں لوگ دونوں اطراف سے داخل ہو سکتے ہیں اور اہم رہنما اکثر عید کی نماز یہاں ادا کرتے ہیں۔ طارق آریاں نے بتایا کہ دھماکے میں مسجد کے امام ایاز نیازی جاں بحق ہو گئے، وہ کابل میں مشہور تھے اور ان کے خطبات میں لوگ دور دراز کے علاقوں سے شرکت کے لیے آتے تھے۔ آریان نے ابتدائی بیان میں کہا تھا کہ یہ خودکش حملہ تھا لیکن تحقیقات کے بعد انہوں نے کہا کہ ابھی دھماکے کی نوعیت کے بارے میں کچھ واضح نہیں ہے۔ افغانستان کے صدر اشرف غنی کے ترجمان نے اسے ایک گھناؤنا حملہ قرار دیا۔ واضح رہے کہ ہفتے کو ایک دھماکے میں صحافی اور ڈرائیور ہلاک ہو گئے تھے اور اس حملے کی ذمے داری داعش نے قبول کی تھی۔
 
خبر کا کوڈ : 866358
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش