0
Monday 29 Jun 2020 16:01

پشاور میں تخریب کاری کا منصوبہ ناکام

پشاور میں تخریب کاری کا منصوبہ ناکام
اسلام ٹائمز۔ پشاور کے نواحی علاقے شاہ پور میں سی ٹی ڈی اور حساس ادارے نے مشترکہ آپریشن کرتے ہوئے تخریب کاری کا منصوبہ ناکام بنا دیا ہے۔ آپریشن کے دوران زیر تعمیر مکان سے دو خودکش جیکٹس سمیت بارودی مواد برامد کر لیا گیا ہے۔ سکیورٹی ذرائع کے مطابق کارروائی خفیہ اطلاع پر گئی تھی۔ نامعلوم دہشت گرد چھاپے سے قبل روپوش ہوگئے جنہوں نے زیر تعمیر مکان میں بڑی مقدار میں بارودی مواد چھپا رکھا تھا۔ مواد میں دو خودکش جیکٹس کے علاوہ 4 دستی بم، 4 کلو بارود، پریما کارڈ اور بال بیرنگ شامل ہیں۔ سکیورٹی ذرائع کے مطابق دہشت گروپ نے شہر میں تباہی کیلئے بارودی مواد تیار کر رکھا تھا۔ سکیورٹی اداروں کو گروپ کا سراغ مل گیا ہے جو بہت جلد قانون کے گرفت میں آئے گا۔ قبل ازیں 9 جون 2020ء کو بھی پولیس نے پشاور میں تخریب کاری کا منصوبہ ناکام بناتے ہوئے 8 دہشت گردوں کو گرفتار کیا تھا۔ گرفتار ہونے والے دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیم لشکر اسلام، جماعت الاحرار اور داعش سے بتایا گیا تھا۔ 4 دہشت گردوں کو پولیس مقابلہ کے بعد حراست میں لیا گیا اور بعد ازاں ان کی نشاندہی پر مزید 4 دہشت گردوں کو گرفتار کیا گیا تھا۔ دہشت گردوں کے قبضے سے 4 دستی بم، کلاشنکوف اور 4 پستول برآمد ہوئے ہیں۔ علاوہ ازیں تحریب کاری میں استعمال ہونے والے دو موٹر سائیکل اور ایک موٹر کار بھی برآمد کی گئی تھی۔ پولیس حکام کے مطابق زیر حراست دہشت گرد 14 جنوری اور 23 فروری کو کارخانو چیک پوسٹ پر ہینڈ گرنیڈ حملے، یکم مئی کو متنی میں تاجروں کے گھر اور بھٹہ خشت پر ہینڈ گرنیڈ حملے اور 10 مئی کو بھانہ ماڑی میں حملے کی کارروائیاں کرچکے ہیں۔
خبر کا کوڈ : 871539
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش