0
Saturday 4 Jul 2020 21:56

5 جولائی سیاہ ترین دن ہے جس دن آمر ضیا نے عوامی حکومت کا تختہ الٹا، پیپلز پارٹی

5 جولائی سیاہ ترین دن ہے جس دن آمر ضیا نے عوامی حکومت کا تختہ الٹا، پیپلز پارٹی
اسلام ٹائمز۔ پیپلز پارٹی سندھ کے جنرل سیکریٹری وقار مہدی اور نائب صدر سندھ راشد حسین ربانی نے 5 جولائی کو ملک کا سیاہ ترین دن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ 1973ء پاکستان کی تاریخ کا وہ سیاہ دن ہے، جب شہید ذوالفقار علی بھٹو کی جمہوری حکومت کا تختہ الٹ کر ڈکٹیٹر جنرل ضیا الحق نے عوام کے ووٹوں سے منتخب حکومت پر شب خون مار کر اور اقتدار کی ہوس میں آئین شکنی کی اور اقتدار پر قبضہ کیا۔ اپنے ایک بیان میں دونوں رہنماؤں نے کہا کہ سازش کے تحت ایک جھوٹے مقدمے شہید ذوالفقار علی بھٹو کا عدالتی قتل کر دیا گیا، جس کا ریفرنس آج بھی سپریم کورٹ میں زیر التوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ آمر جنرل ضیا کے سخت ترین مارشل لاء کے دور میں پیپلز پارٹی کے قائدین اور نظریاتی کارکنوں کو پاپند سلاسل کیا گیا اور ملک میں جابرانہ نظام حکومت قائم کر دیا گیا۔

رہنماؤں نے کہا کہ آمر جنرل ضیا نے پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو پھانسی،  کوڑے اور جیلوں میں قید رکھا، جو کہ دنیا کی سیاسی تاریخ میں سیاہ باب کے طور پر ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ شاہ نواز بھٹو کو ایک سازش کے تحت فرانس کے شہر کینز میں شہید کر دیا گیا، پیپلز پارٹی کے کارکنوں کو پھانسیاں دی گئیں اور ہزاروں کارکنان کو مختلف جگہوں پر 80 ہزار سے زائد کوڑے مارے گئے اور آمریت کو پروان چڑھانے کی ناکام کوشش کی گئی۔ پی پی رہنماؤں نے کہا کہ 5 جولائی کے روز ہم کرتے ہیں کہ ہمیشہ آمریت کیخلاف مزاحمت کا کردار ادا کرینگے اور جمہوریت کی مضبوطی اور عوامی طاقت کی بقا اور سربلندی کیلئے کبھی کسی آمر سے سمجھوتہ نہیں کرینگے۔
خبر کا کوڈ : 872523
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش