0
Friday 10 Jul 2020 02:27

فریال تالپور اور وزیراعلیٰ سندھ عذیر بلوچ سے ملاقاتیں کرتے تھے، بریگیڈیئر (ر) باسط شجاع

فریال تالپور اور وزیراعلیٰ سندھ عذیر بلوچ سے ملاقاتیں کرتے تھے، بریگیڈیئر (ر) باسط شجاع
اسلام ٹائمز۔ سابق سیکٹر کمانڈر سندھ رینجرز بریگیڈیئر (ر) باسط شجاع نے کہا ہے کہ پی پی رہنماؤں کے عذیر بلوچ سے رابطے تھے، فریال تالپور اور وزیراعلیٰ سندھ عذیر بلوچ سے ملاقاتیں کرتے تھے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بریگیڈیئر (ر) باسط شجاع نے کہا کہ ذوالفقار مرزا نے لیاری گینگ وار کا ساتھ دیا تھا، 2013ء میں آپریشن میں گینگسٹر ثاقب باکسر مارا گیا تو قادر پٹیل نے اس کے بعد سندھ رینجرز کا محاصرہ کیا تھا، آپریشن میں گینگسٹر مارے گئے اور قادر پٹیل نے لاشیں رکھ کر احتجاج کیا۔ انہوں نے بتایا کہ قادر پٹیل اور لیاری کے لوگوں نے شاہراہ کو لاشیں رکھ کر بند کردیا تھا، لیاری آپریشن میں بہت سے لوگ بھاگے اور پکڑے گئے، کراچی کے جرائم میں سیاسی گٹھ جوڑ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں، کراچی میں تمام کالعدم تنظیموں کے لوگ سیاسی تنظیموں سے منسلک ہوتے تھے۔

بریگیڈیئر (ر) باسط شجاع کے مطابق عذیر بلوچ نے تسلیم کیا کہ وہ افسران کے تبادلے کراتا تھا، عذیر بلوچ کو کچھ سیاسی لوگ تحفظ دے رہے تھے اور کچھ سیاسی لوگوں کی مدد سے وہ ملک سے باہر بھاگ گیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی رپورٹ 2016ء میں مکمل ہوگئی تھی جسے 2020ء تک دبا کر رکھا گیا، 2018ء سے جے آئی ٹی رپورٹ کو پبلک نہیں کیا گیا مگر اب رپورٹ سندھ ہائی کورٹ کے احکامات کے بعد پبلک ہوئی۔ سابق سیکٹر کمانڈر سندھ رینجرز کا مزید کہنا تھا کہ نیٹو کا اسلحہ بھی لیاری میں گیا اس علاقے میں بہت اسلحہ جمع ہوگیا تھا، ایم 16 رائفلز میں نے خود لیاری سے پکڑیں تھیں۔
خبر کا کوڈ : 873516
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش