0
Wednesday 16 Sep 2020 22:23

جزیروں پر نئے شہر بسانے کا اعلان دراصل کراچی کی قیمتی زمین پر قبضے کی سازش ہے، آفاق احمد

جزیروں پر نئے شہر بسانے کا اعلان دراصل کراچی کی قیمتی زمین پر قبضے کی سازش ہے، آفاق احمد
اسلام ٹائمز۔ مہاجر قومی موومنٹ پاکستان کے چیئرمین آفاق احمد کا کہنا ہے کہ اس وقت وفاق کی توجہ کراچی کی بحالی پر مرکوز ہونی چاہئے تھی، لیکن گیارہ سو ارب کے مشکوک پیکج کے فوری بعد جزیروں پر نئے شہر بسانے کا اعلان دراصل کراچی کی قیمتی زمین پر قبضہ کرنے کی سازش ہے، حکومت اگر مخلص ہوتی تو سب سے پہلے کراچی کی بحالی کیلئے ہوائی پیکج کی بجائے ٹھوس اقدامات کرتی۔ اپنے ایک بیان میں آفاق احمد نے کہا کہ مالیاتی پیکج اور بحالی منصوبوں کے نام پر وفاقی و صوبائی حکومت عوام کو بیوقوف بنا رہی ہیں، ابتک جتنے بھی منصوبوں کا اعلان کیا گیا، وہ سب عالمی مالیاتی اداروں سے ملنے والے قرض سے مشروط ہیں اور یہ وہ قرض ہوگا، جسے بعد میں شہر کے لوگوں کو چکانا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اسد عمر مالیاتی پیکج کی مخالفت کرنے والوں کے خلاف تو بولتے ہیں، کیا موصوف یہ بتانا پسند فرمائیں گے کہ جس حکومت کا کل ترقیاتی بجٹ ہی 700 ارب ہو، وہ 1100 ارب کہاں سے فراہم کرے گی۔

آفاق احمد نے کہا کہ جزیروں پر قبضہ کرنے کی یہ پہلی کوشش نہیں، کراچی کی عوام کو یاد ہوگا کہ کچھ عرصہ پہلے یہی جزیرے ملک ریاض کے حوالے کرنے کی سازش بھی کی گئی تھی، اس بار نئے شکاری پرانا جال لے کر آئیں ہیں، عوام کو جزیروں پر نئے شہر بسانے کا خواب دکھا کر اشرافیہ کی جنت تعمیر کی جائے گی، جہاں سے عام آدمی کا گزر بھی نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پہلے پرانے کراچی کو بچایا جائے، پھر کسی اور جانب دیکھا جائے، تین کروڑ شہریوں کو اذیت میں رکھ کر نئے آشیانے بسانے کی کوشش عوام کسی حال میں قبول نہیں کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ شہر اجڑنا صرف غریب آدمی کا مسئلہ نہیں، تاجر و صنعتکار برادری، سول سوسائٹی اور عام شہری سب ہی اس سے متاثر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی و صوبائی حکومت کی غیر سنجیدگی کے بعد ضروری ہوگیا ہے کہ تمام لوگ اپنا شہر بچانے کیلئے ایک ساتھ کھڑے ہوں، کیونکہ کراچی کو بچانے کیلئے کوئی باہر سے نہیں آئے گا۔
خبر کا کوڈ : 886681
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش