1
Thursday 17 Sep 2020 04:29
اسرائیل کیساتھ امارات و بحرین کا دوستی معاہدہ

غاصب صیہونیوں اور امتِ مسلمہ کے غداروں کا انجام تباہی ہے، محمود الزہار

غاصب صیہونیوں اور امتِ مسلمہ کے غداروں کا انجام تباہی ہے، محمود الزہار
اسلام ٹائمز۔ فلسطینی مزاحمتی تحریک حماس کے مرکزی رہنما محمود الزہار نے عرب نیوز چینل المسیرہ کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے اس بات پر زور دیا ہے کہ غاصب صیہونی دشمن کے ساتھ دوستیاں بڑھانے والے ممالک نے نہ صرف امتِ مسلمہ و عرب دنیا کے ساتھ غداری کہ بلکہ اسلامی اعتقادات اور شہداء کے خون سے بھی خیانت کی ہے۔ انہوں نے اپنی گفتگو میں کہا کہ اماراتی شاہی رژیم وہ پہلی حکومت تھی جس نے غاصب صیہونی رژیم کے ساتھ دوستی بنائی اور اُسے بےبہا دولت سے نوازا لہذا یہ کوئی تعجب کی بات نہیں کہ اب وہ بحرین کو بھی اس دوستی معاہدے کی ترغیب دے رہی ہے۔

محمود الزہار نے اپنی گفتگو میں امارات و بحرین اور اسرائیل کے درمیان دوستی معاہدے پر دستخط کے وقت غزہ کی جانب سے مقبوضہ فلسطین پر ہونے والے تازہ راکٹ حملوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ فلسطینی مزاحمتی محاذ نے اسرائیل کی جانب سے غزہ کے آسمان کو "جنگ کے آسمان" میں بدلنے کی مذموم کوشش کا بھرپور جواب دیا ہے۔ انہوں نے اس بات پر تاکید کرتے ہوئے کہ فلسطینی مزاحمت نے اپنے تمام اسلحے کے ساتھ غاصب دشمن کا بھرپور مقابلہ کرنے کی ٹھان لی ہے، کہا کہ جو بھی ہمارا ساتھ دے ہم اسے خوش آمدید کہیں گے جبکہ ہمارا ساتھ نہ دینے والوں کی ہمیں کوئی پرواہ نہیں۔

حماس کے مرکزی رہنما نے غاصب صیہونی دشمن کے ساتھ دوستیاں بنانے والوں کے ڈونلڈ ٹرمپ کی چھتری تلے جمع ہو جانے کو خطے کے ممالک اور مزاحمتی محاذ کے مقابلے میں ان کی کمزوری و کھلی شکست کی علامت قرار دیا اور کہا کہ ہمیں ہر اس ملک کے ساتھ، جس کی سرزمین صیہونی قبضے میں ہے، بے لوث تعاون کر کے امتِ مسلمہ کی صفوں میں اتحاد پیدا کرنا چاہئے۔ محمود الزہار نے اپنی گفتگو کے آخر میں تاکید کرتے ہوئے کہا کہ غاصب صیہونیوں کا انجام بربادی ہے جبکہ وہ تمام خیانتکار جنہوں نے امتِ مسلمہ کے اہم ترین مسائل اور مقدسات سے غداری کی ہے، صفحۂ ہستی سے ضرور مٹ جائیں گے۔
خبر کا کوڈ : 886722
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش