0
Monday 28 Sep 2020 01:57

کراچی و حیدرآباد کی صحیح گنتی ہوجائے تو وزیراعلیٰ بھی شہر سے ہوگا، مصطفیٰ کمال

کراچی و حیدرآباد کی صحیح گنتی ہوجائے تو وزیراعلیٰ بھی شہر سے ہوگا، مصطفیٰ کمال
اسلام ٹائمز۔ پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ ملکی نظام ہینگ ہوگیا ہے اور اپنی افادیت کھو چکا ہے، فیصلے تو ہورہے ہیں لیکن انصاف نہیں ہورہا۔ تفصیلات کے مطابق پی ایس پی چیئرمین و سابق میئر کراچی مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ ریفارمز کا نام لیکر آنے والی حکومت مصلحت پسندی کا شکار ہوگئی، کے پی حکومت کی مثال دی جاتی تھی، سیاسی انتقام کیلئے استعمال شروع کردیا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ ریفارمز کا ایجنڈا دھرے کا دھرا رہ گیا، ملک میں ڈھائی کروڑ بچے اسکول جانے کی عمر میں تعلیم سے محروم ہیں، یہ ڈھائی کروڑ بچے جب بڑے ہوں گے اور تعلیم یافتہ نہیں ہوں گے تو دہشتگرد نہیں بنیں گے تو اور کیا بنیں گے۔ چیئرمین پی ایس پی کا کہنا تھا کہ 3 کروڑ آبادی کے شہر کو پیپر میں ایک کروڑ 60 لاکھ بتایا گیا، آپ ہمیں صحیح نہ گن کر ملکی نظام تباہ و برباد کررہے ہیں۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ کراچی، حیدرآباد کے لوگوں کی صحیح گنتی کریں، ان دو شہروں کی ٹھیک گنتی ہوجائے تو سندھ کی آبادی کا 55 فیصد ہے اور ان 55 فیصد کے حساب سے ہمیں اسمبلی میں نشستیں ملیں تو وزیراعلیٰ بھی شہر سے ہوگا۔ مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ 125 ارب روپے خرچ کئے، ریکارڈ پیش کیا پھر بھی آج کچرا جمع کردیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سے مطابہ ہے کل حادثے میں 15 افراد جاں بحق ہوئے ان کے ورثاء کی داد رسی کریں۔ چیئرمین پاک سرزمین پارٹی مصطفیٰ کمال کا مزید کہنا تھا کہ دواؤں کی قیمتوں کو واپس اپنی جگہ پر لایا جائے۔
خبر کا کوڈ : 888820
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش