0
Thursday 1 Oct 2020 03:13

کے الیکٹرک کا لائسنس منسوخ کرکے انتظامیہ کیخلاف کارروائی کی جائے، حافظ نعیم الرحمن

کے الیکٹرک کا لائسنس منسوخ کرکے انتظامیہ کیخلاف کارروائی کی جائے، حافظ نعیم الرحمن
اسلام ٹائمز۔ امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمن نے کہا ہے کہ کراچی میں بااختیار شہری حکومت ہی تمام مسائل کا حل ہے، اس کے لئے سندھ حکومت کا موجودہ بلدیاتی ایکٹ منسوخ کیا جائے۔ ادارہ نورحق میں حقوق کراچی مارچ کی شاندار کامیابی کے بعد کے الیکٹرک کے خلاف جدوجہد سمیت حقوق کراچی تحریک کے آئندہ کے مراحل کے سلسلے میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حافظ نعیم الرحمن کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت کے الیکٹرک کو بھاگنے کا موقع فراہم کررہی ہے، قومی خزانے پر بوجھ ڈال کر  کےالیکٹرک کو مزید نوازا جارہا ہے، وفاقی حکومت کے الیکٹرک کے لئے فرار کی راہ ہموار کرکے نئی تازہ دم کمپنی کو لے کر آنے کی تیاری کررہی ہے، ایسی صورت میں کے الیکٹرک کے ذمہ تمام واجب الادا رقم قومی خزانے سے ادا کی جائے گی، جماعت اسلامی کسی صورت میں کے الیکٹرک کو بھاگنے کا موقع نہیں دے گی۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ حقوق کراچی تحریک مسائل کے حل تک جاری رہے گی اور ہم عوامی دباؤ کے ذریعے سے ہی کے الیکٹرک سمیت تمام مسائل حل کرائیں گے، کراچی میں از سر نو مردم شماری کی جائے۔

امیر جماعت اسلامی کراچی نے کہا کہ گزشتہ دنوں کے الیکٹرک ہیڈ آفس کے باہر پی ٹی آئی نے عوام کو بے وقوف بنانے اور کے الیکٹرک کو سپورٹ کرنے کے لئے دھرنا دیا تھا جسے اسد عمر نے یہ کہہ کر ختم کروا دیا تھا کہ اب شہر میں لوڈشیڈنگ نہیں کی جائے گی۔ حفظ نعیم الرحمن نے کہا کہ ہم کے الیکٹرک کے خلاف سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کریں گے اور سڑکوں پر بھی احتجاج کریں گے، کے الیکٹرک کا فوری طورپر لائسنس منسوخ کرکے اس کی انتظامیہ کیخلاف کارروائی کی جائے، تمام حکومتی جماعتیں کے الیکٹرک کے معاملے پر خاموشی اختیار کرتی ہیں، پی ٹی آئی کی حکومت بجلی پیدا کرنے کے لئے پیداواری کمپنیوں کے درمیان مسابقت بات کرتی ہے تو نیپرا کی سماعت میں شرکت کیوں نہیں کرتی۔
خبر کا کوڈ : 889463
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش