0
Friday 20 Nov 2020 12:49

پنجاب بھر میں شادی ہالز کے اندر تقریبات پر پابندی عائد کر دی گئی

پنجاب بھر میں شادی ہالز کے اندر تقریبات پر پابندی عائد کر دی گئی
اسلام ٹائمز۔ حکومت پنجاب نے کورونا کے پھلاؤ کے باعث صوبہ بھر میں شادی ہالز کے اندر تقریبات پر پابندی عائد کر دی ہے۔ سیکریٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر کیپٹن (ر) محمد عثمان نے اس ضمن میں نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا ہے۔ کیپٹن (ر) محمد عثمان کا اس ضمن میں کہنا یے کہ تقریبات میں 300 افراد کے اکٹھے ہونے  کی اجازت ہو گی، عوامی اجتماعات میں 300 سے زائد افراد کے اکٹھے ہونے کی اجازت نہیں ہو گی۔ سیکریٹری ہیلتھ کیئر نے کہا کہ شادی، بیاہ اور دیگر تقریبات کی اجازت صرف کھلی جگہوں پر ہو گی، کھلی جگہ پر تقریبات میں ایس او پیز پر عمل درآمد کرنا لازم ہو گا۔ کیپٹن (ر) عثمان کا کہنا ہے کہ تقریبات کے علاوہ عوامی مقامات پر چہرہ ڈھانپنا بھی لازم ہو گا، پابندی کا اطلاق 20 نومبر 2020 سے 31 جنوری 2021 تک ہو گا۔ چند روز قبل وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک بھر میں کورونا کیسز چار گنا بڑھ گئے ہیں، ہم نے سارے ملک میں جلسے، جلوس ختم کر دیئے ہیں۔

قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کسی بھی اجتماع میں 300 سے زیادہ لوگ اکھٹے کرنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ ان کا کہنا تھا کہ شادی ہالز کے اندر شادیوں پر پابندی عائد کر رہے ہیں صرف باہر لوگوں کو تقریبات کی اجازت ہو گی جس میں تین سو لوگوں کو بلانے کی اجازت ہو گی۔ وزیراعظم نے کہا اسکولوں پر ابھی پابندی نہیں لگا رہے، ایک ہفتہ مزید دیکھیں گے اگر وہاں کورونا کیسز میں اضافہ ہوا تو سردیوں کی چھٹیوں کو بڑھا دیں گے۔ وزیراعظم عمران خان کی ایک بار پھر قوم سے ماسک کے استعمال کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ کہ ایس او پیز پر عمل نہ کرنے کی وجہ سے ہمارے ملک کورونا کیسز کی شرح میں چار گنا اضافہ ہو گیا ہے مساجد میں ایس او پیز پر عمل کرنا ہو گا، خدشہ ہے احتیاط نہ کی تو اسپتال مریضوں سے بھر جائیں گے۔
خبر کا کوڈ : 898906
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش