0
Saturday 21 Nov 2020 11:02

ڈی آئی خان، ڈی ایچ کیو ہسپتال ایک اور نوجوان کی زندگی نگل گیا

ڈی آئی خان، ڈی ایچ کیو ہسپتال ایک اور نوجوان کی زندگی نگل گیا
اسلام ٹائمز۔ ڈیرہ اسماعیل خان مدنی ٹاؤن کا رہائشی 22 سالہ نوجوان محمد آفاق گذشتہ کچھ عرصہ سے گردوں کے عارضہ میں مبتلا تھا، اسے جمعرات کے روز ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے نیفرالونی وارڈ میں ڈائیلاسز کیلئے لایا گیا۔ محمد آفاق کے والد غلام سرور کے مطابق میرا بیٹا ہسپتال خود چل کر آیا اور اسکی طبیعت مکمل طور پر ٹھیک تھی، دوران ڈائیلاسز بجلی بند ہوگئی اور ہم نے ہسپتال انتظامیہ کو فوری طور پر اگاہ کیا کہ دوران ڈائیلاسز بجلی کی سپلائی معطل ہوگئی ہے، اسوقت دیگر مریضوں کا بھی یونٹ میں ڈئیلاسز جاری تھا لیکن ہمارے بیٹے کی طبیعت بگڑنے لگی تو ہم نے وارڈ میں موجودہ ڈاکٹرز اور نرسز کو آگاہ کیا، تاہم ڈاکٹر اور نرسز نے آنے کی بجائے ہمیں کہا کہ آپ لوگ ڈائیلاسز مشین کو انگلی کے ذریعہ مینول طریقے سے گھما کر چلاتے رہیں۔ محمد آفاق کے والد نے کہا کہ ہم نے یہ بھی کیا لیکن میرے بیٹے کی طبیعت نہیں سنبھل رہی تھی، میری اہلیہ اور میں نے شور مچایا کہ جنریٹر چلا کر ڈائیلاسز کا عمل مکمل کیا جائے، ڈاکٹرز اور نرسز جو موقع پر موجود تھیں انہوں نے ہماری ایک بھی نہیں سنی اور وارڈ میں آنے سے گریز کرتے رہے، جبکہ جنریٹر کے متعلق ہسپتال عملہ نے بتایا کہ جنریٹر فنکشنل نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس دوران میرے بیٹے کی سانسیں اکھڑنے لگیں اور ہم نے ہسپتال عملے کی منتیں کی کہ خدارا میرے بیٹے کی جان بچائیں، اسکی طبیعت مکمل طور پر بگڑ گئی تو عملے نے اسوقت آکر اکسیجن لگایا، لیکن تب تک آفاق مکمل طور پر بے ہوش ہو چکا تھا اور اس دوران اس کی موت واقع ہوگئی۔ محمد آفاق کے والد کا کہنا ہے کہ میرے بیٹے کو قتل کیا گیا ہے جس کے ذمہ دار ڈاکٹرز اور ہسپتال انتظامیہ ہے، ہم بار بار چلا رہے تھے لیکن ہماری بات کوئی سننے کو تیار نہیں تھا، میرے بیٹے کے مرنے کے بعد ڈاکٹرز نے آکر معذرت کی۔ آفاق کے والد غلام سرور نے وزیراعلٰی خیبر پختونخوا محمود خان، کمشنر ڈیرہ ڈویژن یحییٰ خان اخونزادہ، ڈپٹی کمشنر ڈیرہ اور دیگر متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ ان کے بیٹے کی موت کی تحقیقات کرائی جائیں، ہسپتال انتظامیہ اور متعلقہ سٹاف کے خلاف تادیبی کارروائی عمل میں لائی جائے۔
خبر کا کوڈ : 899060
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش