0
Wednesday 25 Nov 2020 17:21

عرب ریاستیں صیہونیت کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھاکر غداری کی مرتکب ہورہی ہیں، علامہ باقر زیدی

عرب ریاستیں صیہونیت کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھاکر غداری کی مرتکب ہورہی ہیں، علامہ باقر زیدی
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین سندھ کے سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی نے اسرائیل کے وزیراعظم نیتن یاہو اور سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی خفیہ ملاقات پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ عرب ریاستیں صیہونیت کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھا کر امت مسلمہ سے سنگین غداری کی مرتکب ہو رہی ہیں، سعودی عرب اور عالم اسلام کے کھلے دشمن اسرائیل کے وزیراعظم کی ملاقات کی خبر نے سعودیہ کی رہی سہی ساکھ کو بھی تباہ کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فلسطین کے حوالے سے پوری پاکستانی قوم کا وہی مؤقف ہے جو بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کا تھا، اسرائیل کی غاصب ریاست کو کبھی تسلیم نہیں کیا جاسکتا، جو نام نہاد دانشور اسرائیل اور امریکہ کی حمایت میں دلائل دیتے ہوئے نہیں تھکتے انہیں ریالوں اور ڈالروں کی چھنک نے بے چین کر رکھا ہے۔

انہوں نے کہا کہ فلسطین محض زمینی تنازع نہیں بلکہ عالم اسلام کی غیرت و حمیت کا مسئلہ ہے، قبلہ اول امت مسلمہ کے لئے محترم اور اس کی حفاظت ہر کلمہ گو کا شرعی فریضہ ہے، اسرائیل ایک غاصب ریاست ہے، جو ظلم و جور کے ساتھ وجود میں آئی ہے، نہتے اور مظلوم فلسطینوں کی سرزمین پر طاقت کے زور سے قبضے کی کوشش کبھی کامیاب نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ جو عرب ریاستیں ذاتی مفادات کے لئے شعائر اللہ کے ناموس کو داؤ پر لگانا چاہتی ہیں ان سے قدرت بھیانک انتقام لے گی، تاریخ میں انہیں عالم اسلام کے غدار کے عنوان سے لکھا جائے گا، حکومت پاکستان اسرائیل کے حوالے سے سرکاری سطح پر ایسا اٹل اور اصولی مؤقف پیش کرے جو بانی پاکستان اور پوری قوم کے جذبات کی ترجمانی کرتا ہو۔
خبر کا کوڈ : 899912
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش