0
Wednesday 25 Nov 2020 15:54

مولانا قلب صادق علم و اتحاد کا عظیم مینارہ تھے، عظمت علی

مولانا قلب صادق علم و اتحاد کا عظیم مینارہ تھے، عظمت علی
اسلام ٹائمز۔ کل شب تقریباً دس بجے قوم و ملت کا ایک عظیم ستون ہم سے جدا ہوگیا۔ مولانا کلب صادق ایک طویل عرصہ سے بیمار تھے اور ایرا میڈیکل کالج میں ان کا مسلسل علاج چل رہا تھا، مگر کل شب اپنے معبود سے جا ملے اور پوری قوم و ملت کو روتا بلکتا چھوڑ گئے۔ مولانا علم و ادب کا ایک مینارہ اور اتحاد و یکجہتی کی بہترین مثال تھے۔ مولانا کلب صادق صاحب نے ہمیشہ اور ہر موقع پر علم حاصل کرنے کی تاکید کی ہے اور اپنی وصیت میں بھی کہا ہے کہ قوم کے ہر فرد پر لازم ہے کے قوم و ملت کی ترقی کی خاطر زیادہ سے زیادہ علم حاصل کرے۔

مولانا کے کچھ جملے ہمیشہ یادگار رہیں گے۔ علم حاصل کرو اور کسی ایک موضوع میں ماہر ہو جاؤ۔ شیعہ، سنی اتحاد کو برقرار رکھو۔ کبھی اختلاف پیدا مت کرو۔ اتحاد میں ہی طاقت ہے۔ حقیر کی ابھی کچھ عرصہ سے پہلے ملاقات ہوئی تھی، جب وہ ایرا میڈیکل کالج میں زیر علاج تھے۔ وہاں ملاقات میں بھی مولانا نے بار بار تعلیمی عظمت کا ذکر کیا اور کہا کہ قوم کو ہونہار طالب کی شدید ضرورت ہے۔ ملک و قوم کی ترقی علمی بالیدگی پر موقوف ہے اور اس کے لیے ہر فرد کو کوشا رہنا چاہیئے۔ اللہ مرحوم کے درجات بلند فرمائے اور ان کے پسماندگان کو صبر جمیل عنایت فرمائے۔
خبر کا کوڈ : 899929
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش