0
Wednesday 25 Nov 2020 20:24

افغان امن ڈائیلاگ پاکستان کی بڑی کامیابی ہے، عمران خان

افغان امن ڈائیلاگ پاکستان کی بڑی کامیابی ہے، عمران خان
اسلام ٹائمز۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں بہتری آ رہی ہے، سی پیک کے باعث پاکستان کو ہنرمند افراد کی ضرورت ہے، افغان امن ڈائیلاگ پاکستان کی بڑی کامیابی ہے، افغانستان میں امن سے پاکستان کے قبائلی علاقوں کو فائدہ ہوگا، لاک ڈاؤن کیساتھ یومیہ اجرت والوں کو تحفظ فراہم کیا، افغانستان میں امن سے خطے کو فائدہ ہوگا، 17 سال بعد پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ سرپلس ہوگیا، ہم نے منی لانڈرنگ کیخلاف کارروائیاں کیں، ہم نے غیر ضروری اجتماعات پر پابندی لگائی، حکومتی اقدامات کے ذریعے معیشت کو کورونا اثرات سے بچایا، ترقی پذیر ممالک کیلئے منی لانڈرنگ بہت بڑا مسئلہ ہے۔ وزیراعظم عمران خان  کا عالمی اقتصادی فورم ’’پاکستان اسٹریٹجی ڈائیلاگ‘‘ سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وقت گزرنے کیساتھ ساتھ ملکی معیشت مستحکم ہو رہی ہے، سی پیک ملکوں کے درمیان روابط کا منصوبہ ہے، پاکستان خوش قسمت ہے کاروباری برادری کو ہم پر اعتماد ہے، استحکام حاصل کرنے کے بعد ہم اب مثبت سمت میں بڑھ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سی پیک کے باعث پاکستان کو ہنرمند افراد کی ضرورت ہے، پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں بہتری آ رہی ہے، درآمدات اور برآمدات میں 40 ارب ڈالر کا فرق تھا، ہم نے منی لانڈرنگ کیخلاف کارروائی کی، سترہ برس بعد پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ پلس میں آگیا، احساس کیش پروگرام کے ذریعے غریب گھرانوں کی مدد کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ فیصل آباد میں ٹیکسٹائل انڈسٹری تیزی سے کام کر رہی ہے، فیصل آباد میں لیبر کی کمی کا بھی سامنا ہے، درآمدات اور برآمدات میں 40 ارب ڈالر کا فرق تھا،  17سال بعد پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ سرپلس ہو گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہم نے لاک ڈاؤن کے برعکس عوامی اجتماعات پر پابندی لگائی ہے، ہم ایسے اقدمات کر رہے ہیں جس سے معیشت متاثر نہ ہو، پاکستان میں کورونا کیس بڑھنے پر ہمیں تشویش ہے۔

وزیراعظم پاکستان کا کہنا تھا کہ پاکستان کاروبار اور فیکٹریوں میں لاک ڈاؤن کا متحمل نہیں ہو سکتا، کورونا متاثرہ علاقوں کی نشاندہی کی اور سمارٹ لاک ڈاؤن متعارف کرایا، ہاٹ سپاٹس کا پتا چلا کر سمارٹ لاک ڈاؤن کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی مدد سے امریکا اور طالبان مذاکرات کی میز پر آئے، اُمید ہے افغانستان میں امن آئے گا، افغانستان میں امن سے اطراف کے علاقوں کو فائدہ ہوگا، صدر ٹرمپ نے افغانستان میں اچھے اقدامات کیے، اُمید ہے جو بائیڈن افغانستان میں اچھے اقدامات سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ بعدازاں وزیراعظم عمران خان نے وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور دیگر پارٹی رہنماوں کے ہمراہ پاکستان مسلم لیگ ق کے سربراہ چودھری شجاعت کی رہائش گاہ جاکر ان کی خیریت دریافت کی۔ ذرائع کے مطابق ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور اور موجودہ ملکی سیاسی صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔
خبر کا کوڈ : 899942
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش