0
Saturday 26 Dec 2020 17:59

ادلب، تناؤ میں اضافے کے پیش نظر شامی فوج کیجانب سے آپریشن کی تیاریاں مکمل

ادلب، تناؤ میں اضافے کے پیش نظر شامی فوج کیجانب سے آپریشن کی تیاریاں مکمل
اسلام ٹائمز۔ شام کے شمالی صوبے ادلب میں گذشتہ چند ہفتوں پر محیط نسبی آرام و سکون کے بعد حراس الدین، انصار التوحید اور ہیئۃ تحریر الشام نامی دہشتگرد گروہوں کی جانب سے ایک مرتبہ پھر شامی افواج پر گولہ باری کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔ روسی خبررساں ایجنسی اسپتنک کے مطابق عالمی حمایت یافتہ مسلح دہشتگردوں کی جانب سے صوبہ ادلب کے جنوبی علاقے جبل الزاویہ میں تعینات شامی فوج پر مارٹر گولوں کے ساتھ حملہ کیا گیا ہے تاہم کسی قسم کے جانی یا مالی نقصان کی رپورٹ موصول نہیں ہوئی۔ رپورٹ کے مطابق شامی افواج نے ہونے والے حملے کے جواب میں کنصفرہ، سفوہن اور بلدہ البارہ میں واقع دہشتگردوں کے ٹھکانوں کو توپخانے اور میزائلوں کے ساتھ نشانہ بنایا ہے۔

اس حوالے سے ذرائع نے بتایا ہے کہ دہشتگردوں نے ادلب کے جنوبی علاقوں بنین اور کفربطیخ کی جانب سے چڑھائی کی کوشش بھی کی جسے شامی افواج و عوامی مزاحمتی فورسز نے ناکام بنا دیا جس کے دوران کئی ایک دہشتگرد مارے گئے ہیں۔ ادلب کی تازہ ترین صورتحال کے بارے ذرائع کا کہنا ہے کہ دہشتگرد اس کوشش میں ہیں کہ کسی طرح جبل الزاویہ، سہل الغاب اور لاذقیہ کے شمال مشرقی علاقوں میں اپنی فوجی موجودگی کو مستحکم کر لیں تاہم شامی افواج، عوامی مزاحمتی فورسز اور روس کی اتحادی افواج کی طرف سے دہشتگردوں کی تمام نقل و حرکت پر کڑی نگرانی کی جا رہی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ شامی فوج حماہ، ادلب اور لاذقیہ کے مختلف مقامات میں ہر قسم کے ممکنہ فوجی تصادم کے لئے بالکل تیار ہے۔
خبر کا کوڈ : 906328
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ٹوٹا دل
17 Sep 2021
ہماری پیشکش