0
Monday 11 Jan 2021 15:53

سندھ 68 فیصد گیس پیدا کرتا ہے، گیس پر پہلا حق سندھ کا ہے، مرتضیٰ وہاب

سندھ 68 فیصد گیس پیدا کرتا ہے، گیس پر پہلا حق سندھ کا ہے، مرتضیٰ وہاب
اسلام ٹائمز۔ سندھ حکومت اور وزیراعلیٰ سندھ کے مشیر برائے قانون، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضیٰ وہاب کا کہنا ہے کہ ہمیں آئینی طور پر ترجیح نہیں دی جاتی ہے۔ بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ گیس سپلائی کی بندش بھی مسئلہ ہے، آئین پاکستان میں جو شق درج ہے اس پر بھی عمل نہیں کیا جارہا، آرٹیکل 158 کہتا ہے کہ صوبوں سے نکلنے والی معدنیات پر پہلا حق صوبے کا ہے۔ مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ سندھ 68 فیصد گیس پیدا کرتا ہے، گیس پر پہلا حق سندھ کا ہے، افسوس کہ چولہے ٹھنڈے ہیں، صنعتی پہیہ جام ہے اور گیزر بند ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ معاملہ عدالت میں گیا، سندھ ہائیکورٹ نے صوبے کے حق میں فیصلہ دیا، پاکستان کی میجر ایکسپورٹ ہمارے علاقے سے ہوتی ہے، سب سے زیادہ ٹیکس ان صنعتی علاقوں سے ملتا ہے، ملازمتیں بھی کوٹری جامشورو کے صنعتی یونٹ دیتے ہیں۔ مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ کراچی کے صنعتکار منہگی گیس خریدنے پر بھی راضی ہیں پھر بھی گیس نہیں دی، صنعتوں کو گیس نہیں دی جو اخلاقی اعتبار سے بھی غلط ہے۔

اُن کا سوال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کیا یہ ہے تبدیلی؟ کیا گیس بند کرکے صنعتی ترقی لائیں گے، کیا یہ ہے ترقی؟۔ مرتضیٰ وہاب کا مزید کہنا تھا کہ وفاق نے این ایف سی کے تحت ملنے والے پیسوں میں سے 52 ارب کم دیئے گئے ہیں، ہمیں امید تھی کہ ہمارا حصہ بڑھائیں گے لیکن جوخود طے کیا وہ بھی نہیں دے رہے۔ مرتضیٰ وہاب نے وزیراعظم عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پتہ نہیں وزراء آپ سے کیا بیان کرتے ہیں، صوبہ سندھ کی وفاق میں نمائندگی ہے، پی ٹی آئی، جی ڈی اے اور ایم کیو ایم کو نمائندگی حاصل ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ چھ وفاقی وزراء ہیں وہ کیوں بات نہیں کرتے سندھ کے حقوق اور جائز حصے کی؟ یہ ان کی بنیادی ذمہ داری ہے۔
خبر کا کوڈ : 909486
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
میچ شروع
25 Jan 2021
ہماری پیشکش