0
Monday 25 Jan 2021 23:24

داعش کے ذریعے مشرق وسطیٰ کی تباہی صیہونی عزائم کا حصہ تھا، علامہ ناصر عباس جعفری

داعش کے ذریعے مشرق وسطیٰ کی تباہی صیہونی عزائم کا حصہ تھا، علامہ ناصر عباس جعفری
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کراچی ڈویژن کے زیر اہتمام مسجد و امام بارگاہ خیر العمل انچولی میں مرکزی مجلس برسی بیاد سردارانِ شہدائے مدافعان حرم اہل بیتؑ و شہدائے سانحہ مچھ کا انعقاد کیا گیا، جس میں بڑی تعداد میں مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے شرکت کی۔ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ ناصر عباس جعفری نے شہدائے وطن کو سلام عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ امت مسلمہ کو دہشت گردی کی آگ میں جھونکنے والی ایک ہی قوت ہے، ملک میں ڈاکٹرز، انجینئرز، شعراء و خطباء کی ٹارگٹ کلنگ کی گئی، دنیا میں کسی یزید کی بیعت نہیں کی، اس وجہ سے 14 سو سال سے ہمیں دہشتگردی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، یزیدیت کے خلاف ملت اسلامیہ متحد ہے، نہ کل یزیدیت کی بیعت کی تھی، نہ آج کریں گے، امام عالی مقام نے امت کی اصلاح اور دین کی بقاء کی خاطر اپنی جان دی۔ انہوں نے کہا کہ مشرق وسطیٰ میں آج گریٹر اسرائیل بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

علامہ ناصر عباس جعفری کا کہنا تھا کہ عالمی طاقتوں کو ملک خداداد کی سالمیت منظور نہیں، طاغوتی طاقتوں کو ہمارا ایٹمی طاقت بننا برداشت نہیں، ایک منظم انداز سے داعش جیسی دہشتگرد تنظیموں کو بنایا گیا، تاکہ دنیا پر یہ ظاہر کہا جا سکے کہ مسلمانوں نے ہی امت مسلمہ کو خود نقصان پہنچایا ہے۔ مشرق وسطی کی تباہی صیہونی عزائم کا حصہ تھا، سابق امریکی صدر ٹرمپ کے بیان کے مطابق امریکہ نے مشرق وسطیٰ کی تباہی کیلئے 7 ہزار ارب ڈالر خرچ کئے، عراق کو تباہ حالی کی طرف دھکیل دیا گیا، امریکا کی جانب سے گذشتہ 20 سالوں میں اس خطے میں اپنے عزائم کی تکمیل کے لئے بےدریغ خرچہ کیا گیا، جو شکست میں تبدیل کر دیا گیا، مگر گریٹر اسرائیل کے صہیونی منصوبے کو ناکام بنا دیا گیا، وطن کیلئے جانیں دینے والی افواج پاکستان کو سلام پیش کرتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کی جانب سے سانحہ شہدائے مچھ کے مطالبات کو ماننے میں تاخیر کی گئی، ملک میں دہشتگرد آزاد اور مظلوم انصاف کے متلاشی ہیں، دھرنا دیئے بغیر کام نہیں چلتا، ملک میں کالعدم جماعتوں کی منظم انداز سے سپورٹ کی جا رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عزاداروں کے خلاف ملک میں مسلسل ایف آئی آر کاٹی جا رہی ہیں،حکومتی اداروں میں کالعدم جماعتوں کے تائید کردہ افسران کے ایماء پر ہمارے علمائے کرام کے خلاف مقدمات قائم کئے جا رہے ہیں، ملت جعفریہ نے ملکی سالمیت کی خاطر عظیم قربانیاں دیں، وطن کے باوفا بیٹے ہیں، شیعہ ڈاکٹرز، انجینئرز، شعراء و خطباء اور تاجروں کو ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بنایا جانا قومی نقصان ہے۔ انہوں نے کہ مسنگ پرسنز کے حوالے سے ہمیں شدید تحفظات ہیں، جبری لاپتہ افراد کو قانون کے تقاضے پورے کرتے ہوئے عدالتوں کے سامنے پیش کیا جائے، شیعہ خطباء و عزاداروں کے خلاف بلاجواز مقدمات کو فوری طور پر ختم کیا جائے۔

کانفرنس سے مولانا باقر عباس زیدی، ذاکر اہلبیت شوکت رضا شوکت، ذاکر اہلبیت نوید عاشق، علامہ مختار امامی، علامہ نثار قلندری، مولانا مرزا یوسف حسین، مولانا صادق جعفری، مولانا علی انور جعفری، علامہ مبشر حسن نے خطاب کیا جبکہ دیگر مہمانانِ گرامی میں مولانا نشان حیدر ساجدی، مولانا محمد رضا جعفری، مولانا ملک غلام عباس، مولانا عامر شیرازی، علامہ نقی نقوی، علامہ سبط حیدر، علامہ علی غنی نقوی، یعقوب شہباز، ابرار حسن، سلمان حیدر، رضی حیدر رضوی، عسکری دیو جانی، فرحت عباس، نوحہ خواں عرفان حیدر، شادمان رضا، سہیل شاہ، رضوان زیدی، مسیب رضوی، میثم جعفری نے نوحہ خوانی کی اور سلام پیش کیا۔
خبر کا کوڈ : 912350
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش