0
Monday 3 May 2021 17:49

سول ایوی ایشن انتہائی بدحال محکمہ ہے، جعلی لائسنس پر پائلٹ جہاز چلاتے رہے، چیف جسٹس

سول ایوی ایشن انتہائی بدحال محکمہ ہے، جعلی لائسنس پر پائلٹ جہاز چلاتے رہے، چیف جسٹس
اسلام ٹائمز۔ سپریم کورٹ میں جی ایم سکیورٹی کے جعلی ڈگری کے معاملے کی سماعت کے دوران چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ سول ایوی ایشن انتہائی بدحال محکمہ ہے، جعلی لائسنس پر پائلٹ جہاز چلاتے رہے، جعلی ڈگری پر لوگ سکیورٹی جیسے حساس شعبے کی اہم ترین نشست پر نوکری پوری کر گئے۔ چیف جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 2 رکنی بینچ نے سول ایوی ایشن کے جی ایم سکیورٹی کی پینشن کے معاملے کی سماعت کی۔ وکیل سول ایوی ایشن نے کہا کہ جی ایم ندیم زبیری نے نہ صرف ڈگری جعلی جمع کروائی بلکہ کراچی یونیورسٹی کا تصدیقی لیٹر بھی جعلی بنوایا، ہائیکورٹ کا فیصلہ حقائق کے منافی ہے، کالعدم قرار دیا جائے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ سول ایوی ایشن انتہائی بدحال محکمہ ہے، جعلی لائسنس پر پائلٹ جہاز چلاتے رہے اور جعلی ڈگری پر لوگ سکیورٹی جیسے حساس شعبے کی اہم ترین نشست پر نوکری پوری کر گئے، اسی لئے ایئرپورٹس پر اسمگلنگ آسانی سے ہو رہی ہے، ایئرپورٹس کے سی سی ٹی وی کیمرے تک کام نہیں کرتے۔ بعد ازاں عدالت نے جی ایم سکیورٹی ندیم زبیری کو پینشن دیئے جانے کا سندھ ہائیکورٹ کا حکم معطل کرتے ہوئے سول ایوی ایشن کی اپیل سماعت کلئےی منظور کر لی۔ بعدازاں سپریم کورٹ نے کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کر دی۔
 
خبر کا کوڈ : 930523
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

ہماری پیشکش