0
Thursday 6 May 2021 23:36

کشمیری رہنماء اشرف صحرائی کی شہادت انسانی حقوق کی سنگین پامالی ہے، مشتاق خان

کشمیری رہنماء اشرف صحرائی کی شہادت انسانی حقوق کی سنگین پامالی ہے، مشتاق خان
اسلام ٹائمز۔ امیر جماعت اسلامی خیبر بختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان نے ممتاز کشمیری رہنماء تحریک حریت جموں و کشمیر کے چیئرمین اشرف صحرائی کی بھارتی قید میں طبی سہولیات نہ ملنے کیوجہ سے شہادت پر شدید افسوس، غم اور غصے کا اظہار کرتے ہوئے اسے انسانی حقوق کی سنگین پامالی قرار دیا ہے۔ اپنے ایک بیان میں اُنہوں نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی اور ظلم و ستم کا بازار گرم رکھا ہے۔ 5 اگست 2019 کے بعد کشمیر کی اکثر سیاسی قیادت جیلوں میں قید ہے۔ اس وقت مقبوضہ کشمیر میں کرونا کی وباء کے پھیلاؤ کی وجہ سے اکثریت قیادت کو جیل میں حفاظتی سہولیات فراہم نہیں کی جارہیں، جن سے ان کی زندگیوں کو شدید خطرات لاحق ہیں۔ جبکہ دوسری طرف پاکستان کی حکومت، کشمیر كميٹی اور وزارت خارجہ نے شرم ناک خاموشی اختیار کی ہوئی ہے۔

اُنہوں نے حکومت پاکستان کی ناقص خارجہ و کشمیر پالیسی پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف بھارت ریاستی جبر کی بنیاد پر وہاں کے عوام کی نسل کشی کر رہا ہے۔ دوسری طرف ہمارے حکمران بھارت سے دوستی کی پنگیں بڑھا رہے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کے حکومت پاکستان کشمیری سیاسی قیدیوں کا مسئلہ عالمی عدالت انصاف اور اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن میں اُٹھائے۔ سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ اشرف صحرائی کی پوری زندگی جدوجہد سے عبارت تھی۔ انہوں نے اپنے مشن اور نظریے پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیاباور زندگی کی آخری سانس تک آزادی کشمیر کے موقف پر ڈٹے رہے۔
خبر کا کوڈ : 931161
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش