0
Saturday 22 May 2021 20:19

سندھ میں شدید خشک سالی، وفاق ظلم کا حساب دے، اسماعیل راہو

سندھ میں شدید خشک سالی، وفاق ظلم کا حساب دے، اسماعیل راہو
اسلام ٹائمز۔ وزیر زراعت سندھ اسماعیل راہو نے الزام لگایا ہے کہ انڈس ریور سسٹم اتھارٹی (ارسا) سندھ کے حصے کا پانی نہیں دے رہا ہے۔ ایک بیان میں اسماعیل راہو نے کہا کہ سندھ میں شدید خشک سالی ہوچکی ہے، وفاق کو سندھ کے ساتھ اس ظلم کاحساب دینا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان کی دشمنی پر سندھ کی زراعت تباہ ہو رہی ہے، کاشتکاروں کو نئی فصل لگانے کے لئے پانی نہیں مل رہا ہے۔ وزیر زراعت سندھ نے مزید کہا کہ پنجاب فقط 8 فیصد کم پانی لے رہا ہے جبکہ سندھ کو 46 فیصد کم پانی دیا جارہا ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ لوئر سندھ کے تمام اضلاع شدید قحط سالی کا شکار ہیں، اس وقت سندھ کے تینوں بیراجوں کی حالت بہت ہی گمبھیر ہے۔ اسماعیل راہو نے یہ بھی کہا کہ گڈو بیراج کو 12 ہزار 6 سو کیوسک پانی ملنا چاہیئے، جسے فقط 6 ہزار 632 کیوسک مل رہا ہے، اسے 47 اعشاریہ 4 فیصد پانی کم دیا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سکھر بیراج کو 43 ہزار 100 کیوسک پانی ملنا چاہیئے، لیکن اسے فقط 27 ہزار 339 کیوسک پانی دستیاب ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ کوٹری بیراج کی کینالز کو 21 ہزار 700 کیوسک پانی ملنا چاہیئے، اُسے فقط 7 ہزار 555 کیوسک پانی دیا جارہا ہے، اس بیراج پر بدترین صورتحال ہے، یہاں قلت 65 فیصد تک پہنچ چکی ہے۔ اُن کا کہنا تھا کہ اب تک سندھ میں کہیں بھی دھان کی فصل نہیں لگائی جاسکی ہے، صوبے میں باغات، سبزیوں، گنے اور کپاس کی فصل ختم ہونے لگی ہے۔ اسماعیل راہو نے کہا کہ اب بھی اگر پانی دیا گیا تو فصلوں کو مزید نقصان پہنچے گا، ارسال کی جانب سے پانی نہ دینے پر کپاس کی فصل کم کاشت ہوئی ہے۔
خبر کا کوڈ : 933958
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش