0
Friday 11 Jun 2021 20:49

دینی مدارس اسلام کے قلعے ہیں، میر آصف اکبر

دینی مدارس اسلام کے قلعے ہیں، میر آصف اکبر
اسلام ٹائمز۔ نظام المدارس پاکستان کے ناظم اعلیٰ میر آصف اکبر نے کہا ہے کہ دینی مدارس اسلام کے قلعے ہیں، مدارس دینیہ کے ہوتے ہوئے کوئی اسلام کے پُرامن تشخص کو نقصان نہیں پہنچا سکتا۔ دینی مدارس کا مستقبل روشن ہے البتہ جو لوگ علماء، مشائخ کے روپ میں دینی مدارس کو اپنی ذاتی نمود و نمائش، شہرت اور کمائی کا ذریعہ بنائے ہوئے ہیں اور نوجوانوں کو عصری ضروریات سے الگ تھلگ رکھے ہوئے ہیں، ان کا مستقبل تاریک ہے۔ دینی مدارس کو کاروبار اور سیاست چمکانے کا ذریعہ بنانے والے اس دنیا میں بھی رسوا ہوں گے اور آخرت میں بھی۔ انہوں نے کہا کہ شیخ الاسلام ڈاکٹر طاہرالقادری نے دینی مدارس کے علمی، فکری اور روحانی وقار اور معیار کے احیاء کیلئے نظام المدارس کا چیلنج قبول کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نظام المدارس پاکستان سے ملحقہ کسی مدرسہ یا انسٹی ٹیوشن کو سیاسی سرگرمیوں کا حصہ بننے کی اجازت نہیں۔ ہم ایک ایسی دین دار اور قابل نسل پروان چڑھانا چاہتے ہیں جو اسلام کی دنیا بھر میں شناخت اور ترجمان بنے۔ دریں اثناء کنٹرولر امتحانات نظام المدارس علامہ عین الحق بغدادی نے کہا ہے کہ اسلام پرامن مذہب ہے۔ اس وقت دنیا میں اسلام کے پیروکاروں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے جو افسوس ناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام دنیا کے حکمرانوں کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ اسلام فوبیا کے تدارک کیلئے اپنا سیاسی کردار ادا کریں اور اس حوالے سے اقوام متحدہ کے پلیٹ فارم سے بین المذاہب عالمی کانفرنس ہونی چاہیے اور یہ بتایا جانا چاہیے کہ دنیا کا کوئی مذہب انتہا پسندی اور دہشتگردی کی تعلیم نہیں دیتا، اسلام امن عالم کا سب سے بڑا داعی ہے۔
خبر کا کوڈ : 937535
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش