0
Wednesday 16 Jun 2021 21:45

سپریم کورٹ کا ایس ٹی پلاٹس پر قائم ساؤتھ سٹی اسپتال اور ضیاء الدین اسپتال کو شوکاز نوٹس

سپریم کورٹ کا ایس ٹی پلاٹس پر قائم ساؤتھ سٹی اسپتال اور ضیاء الدین اسپتال کو شوکاز نوٹس
اسلام ٹائمز۔ سپریم کورٹ نے ایس ٹی پلاٹس پر قائم ساؤتھ سٹی اسپتال اور ضیاء الدین اسپتال کو شوکاز نوٹس جاری کردیا۔ عدالت عظمی نے بوٹ بیسن سے متصل کوم تھری اور کومز کی تعمیر سے متعلق ڈی جی کے ڈی اے کو کوم کے نام سے منصوب پلاٹوں اور کراچی کے تمام ایس ٹی پلاٹس کی تفصیل ماسٹر پلان کی روشنی میں پیش کرنے کا حکم دیدیا۔ سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس قاضی محمد امین احمد پر مشتمل تین رکنی بینچ کے روبرو بوٹ بیسن سے متصل کوم تھری اور کومز کی تعمیر سے متعلق سماعت ہوئی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے سمندر سے زمین کیسے نکالی گئی؟ کوم بنانے کا کیا جواز؟ ڈی جی کے ڈی اے نے بتایا کہ 1972ء میں 4 کوم تھے اب تو ایک رہ گیا ہے، یہ کمرشل پلاٹس بنائے گئے ہیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے یہ تو پارک کی زمینیں ہیں کیسے کمرشل کردی گئی؟ جو ایس ٹی پلاٹس ہیں انہیں خالی کروائیں، رفاعی پلاٹوں پر قبضہ کرکے لوگ بیٹھے ہیں، آپ کی زمین ہے آپ کو اختیار ہے خالی کرانے کا، آپ اپنے دفتر میں بیٹھے ہیں جیسے سب لچھ ٹھیک چل رہا ہے، سب کچھ غلط ہورہا ہے یہاں، کچھ ٹھیک نہیں۔ ڈی جی نے بتایا کہ ہمارے سروے کے مطابق تجاوزات والی زمینوں کی مالیت سات ارب روپے ہے۔ چیف جسٹس گلزار احمد نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دیئے رفاعی پلاٹوں پر شاپنگ مالز بنے ہوئے ہیں، کون ماسٹر پلان چینج کررہا ہے؟ جہانگیر کوٹھاری پریڈ کو ختم ہی کردیا اتنی اچھی جگہ تھی۔ لوگ شام کو جاکر بیٹھ جاتے تھے، خوبصورت جگہ ہوا کرتی تھی۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے ایکوریم کہاں گیا ہے یا غائب ہوگیا؟ چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ بڑی مچھلیاں چھوٹی مچھلیوں کو کھا گئیں۔
خبر کا کوڈ : 938403
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش