0
Thursday 9 Sep 2021 12:53

پاکستان میں دہشتگردوں کے سلیپر سیلز متحرک ہو چکے ہیں، علامہ جواد نقوی

پاکستان میں دہشتگردوں کے سلیپر سیلز متحرک ہو چکے ہیں، علامہ جواد نقوی
اسلام ٹائمز۔ تحریک بیداری امت مصطفیٰ اور مجمع المدارس تعلیم الکتاب والحکمہ کے سربراہ علامہ سید جواد نقوی کا لاہور میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ افغانستان میں طالبان حکومت کے قیام کے بعد پاکستان میں دہشتگرد عناصر متحرک ہونا شروع ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں پاکستان مذہبی شدت پسندی کی وجہ سے طویل عرصہ میدانِ جنگ بنا رہا ہے۔ اس شدت پسندی کے نتیجے میں پاکستان میں مساجد، امام بارگاہوں، جلوسوں، ہوٹلوں، پارکوں حتیٰ بچوں کے سکولوں کو بھی نشانہ بنایا گیا، جس میں ہزاروں بیگناہ افراد لقمہ اجل بنے۔
 
انہوں نے کہا کہ موجودہ بدلتے ہوئے سیاسی حالات کے تناظر میں دہشتگرد جو ناموافق حالات کی وجہ سے منظرنامے سے غائب ہو گئے تھے، دوبارہ متحرک ہونا شروع ہوگئے ہیں۔ علامہ جواد نقوی نے کہا کہ گزشتہ روز کراچی میں کالعدم جماعتوں کے سربراہان نے آل پارٹیز کانفرنس اور جلسہ کیا، جس میں اپنی دہشتگردانہ کارروائیوں کو پاکستان میں پھر سے آغاز کرنے کا اعادہ کیا۔ اس کانفرنس میں مقدساتِ اسلام اور اہلبیت نبوۃؑ کی شان میں گستاخی کی گئی، پاکستان کے قانون کی رُو سے ایسے بیانات قابل سزا جرائم ہیں۔
 
علامہ جواد نقوی نے کہا کہ کالعدم جماعتوں کا سرعام متحرک ہونا اور کراچی جیسے بڑے شہر میں کانفرنس اور جلسے جس میں مقدسات اسلام کی توہین کی جائے اور دہشتگردانہ کارروائیوں کے عہد باندھا جائے، ملکی اداروں کو دھمکی آمیز تنبیہات کی جائیں، ایسے واقعات ہیں جو ظاہر کرتے ہیں پاکستان میں دہشتگردوں کے سلیپر سیلز متحرک ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ ارباب اختیار، قائدین،علما اور عوام ذمہ داری کا مظاہرہ کریں۔ ان سلیپر سیلز کیخلاف متحد ہو کر ملک و ملت کی جان و مال، عزت و آبرو کا تحفظ کریں۔
خبر کا کوڈ : 952947
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش