0
Thursday 9 Sep 2021 20:42

کنہیا کمار کا راہل گاندھی سے ملاقات کے بعد کانگریس میں شمولیت کی قیاس آرائیاں

کنہیا کمار کا راہل گاندھی سے ملاقات کے بعد کانگریس میں شمولیت کی قیاس آرائیاں
اسلام ٹائمز۔ کنہیا کمار کی کانگریس لیڈر راہل گاندھی اور انتخابی حکمت عملی پرشانت کشور سے ملاقات نے بہار کی سیاست میں قیاس آرائیوں کو جنم دیا ہے۔ اس میٹنگ سے یہ قیاس آرائیاں بھی ہو رہی ہیں کہ کنہیا کمار بائیں بازو کی جماعتوں کی سیاست چھوڑ کر کانگریس کا حصہ بن سکتے ہیں۔ کہا جا رہا ہے کہ پی کے نے پارٹی قیادت کو کنہیا کمار کو کانگریس میں لانے کا مشورہ دیا ہے۔ اگر ذرائع پر یقین کیا جائے تو کنہیا کمار نے راہل گاندھی سے بھی ملاقات کی ہے۔ پرشانت کشور کی رائے ہے کہ کنہیا کمار کی انٹری سے پرانے لیڈروں کے خاتمے کی تلافی ہوسکتی ہے اور نئی نسل میں کوئی مضبوط لیڈر نہیں۔ کنہیا کمار بھی پچھلے ڈیڑھ سال سے سی پی آئی میں سرگرم نہیں ہیں۔ اس سے ان قیاس آرائیوں کو مزید تقویت ملی ہے۔

بہار کانگریس کا کوئی بھی رہنما کنہیا کمار کے کانگریس میں ممکنہ داخلے کے بارے میں کھل کر بات کرنے سے گریز کر رہا ہے۔ یہ خیال کیا جاتا ہے کہ بہت سے رہنما ان کے ممکنہ اندراج سے بے چین محسوس کر رہے ہیں۔ ذرائع سے موصولہ معلومات کے مطابق کنہیا کمار کے تعلقات ان کی اپنی پارٹی کے بڑے لیڈروں کے ساتھ اچھے نہیں ہیں۔ حیدرآباد میں منعقدہ سی پی آئی کے اجلاس میں ان کے خلاف غیر سنجیدگی کا الزام عائد کرتے ہوئے ایک سنسر تحریک پیش کی گئی۔ اس واقعہ کے بعد کنہیا کمار نے پارٹی ہیڈ کوارٹر کا اپنا دفتر بھی خالی کر دیا۔ کچھ افراد کا خیال ہے کہ چھوٹی عمر میں ان کی مقبولیت نے بڑے لیڈروں کو تکلیف میں ڈال دیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ جے این یو واقعہ کے بعد ملک اور دنیا کے میڈیا پر حاوی رہنے والے کنہیا کمار نے اسمبلی انتخابات سے پہلے بہار بھر میں ایک بڑی ریلی کا اہتمام کیا تھا۔
خبر کا کوڈ : 953007
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش