0
Monday 13 Sep 2021 22:43

پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی آرڈیننس صحافت کا گلہ گھونٹنے کے مترادف ہے، میاں محمد اسلم 

پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی آرڈیننس صحافت کا گلہ گھونٹنے کے مترادف ہے، میاں محمد اسلم 
اسلام ٹائمز۔ نائب امیر جماعت اسلامی و سابق ممبر قومی اسمبلی میاں محمد اسلم نے پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی آرڈیننس کو مسترد کرتے ہوئے اسے آزادی صحافت کا گلہ گھونٹنے کے مترادف قرار دیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ میڈیا کی حقیقی معنوں میں آزادی کے بغیر پائیدار جمہوریت کا تصور ممکن نہیں۔ پاکستان میں اس طرح کے ہتھکنڈوں سے میڈیا اور صحافیوں کو کنٹرول کرنے کی منصوبہ بندی ملکی آئین، قانون اور میڈیا کی آزادی کے صریحاً خلاف ہے۔ انھوں نے کہا کہ وزیراعظم میڈیا کی آزادی کے حوالے سے اپنی گذشتہ تقاریر خود بھی سنیں اور وزیر اطلاعات فواد چوہدری کو بھی سنائیں۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے مختلف صحافتی تنظیموں کی جانب سے پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی مجوزہ بل کے خلاف پارلیمنٹ ہاوس کے سامنے منعقدہ احتجاجی دھرنے کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر جماعت اسلامی اسلام آباد کے سیکرٹری اطلاعات سجاد احمد عباسی بھی ان کے ہمراہ تھے۔

میاں محمد اسلم نے کہا کہ جماعت اسلامی پاکستان میں میڈیا کے حقوق کی علمبردار ہے اور اس حوالے سے ہمارے ممبران پارلیمنٹ نے کئی بل بھی پیش کیے۔ پاکستان میڈیا ڈویلپمنٹ اتھارٹی آرڈیننس پرنٹ، الیکٹرانک اور سوشل میڈیا کی آئینی آزادی کو دبانے کے لیے ایک ڈریکونین، آمرانہ، جابرانہ قانون ہے۔ جماعت اسلامی کسی بھی قیمت پر میڈیا کے آئینی حقوق غصب کرنے کی اجازت نہیں دے سکتی۔ انھوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ اس کالے قانون پر مبنی بل کو فوری طور پر واپس لے۔
خبر کا کوڈ : 953662
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش