0
Tuesday 28 Sep 2021 01:25

پیٹرولیم مصنوعات میں عوام کو ریلیف فراہم کرنے کیلے بڑا بوجھ حکومت اٹھا رہی ہے، وزیر خزانہ

پیٹرولیم مصنوعات میں عوام کو ریلیف فراہم کرنے کیلے بڑا بوجھ حکومت اٹھا رہی ہے، وزیر خزانہ
اسلام ٹائمز۔ وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین کا کہنا ہے کہ کورونا کے باعث عالمی مارکیٹ میں پیٹرولیم مصنوعات اور ایل این جی کی قیمتیں بڑھی ہیں، تاہم حکومت عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف کی فراہمی کیلئے بڑا بوجھ خود اٹھا رہی ہے۔ سی این جی صنعت کے مسائل کے حل کیلئے چیئرمین ایف بی آر، چیئرمین اوگرا اور چیئرمین سی این جی پر مشتمل کمیٹی قائم کر دی ہے، وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں ںے گذشتہ روز یہاں ملاقات کیلئے آئے ہوئے وفد سے گفتگو میں کیا۔ وفاقی وزیر خزانہ شوکت ترین نے آل پاکستان سی این جی ایسوسی ایشن کے وفد سے ملاقات کی۔ اس موقع پر چیئرمین ایف بی آر، چیئرمین اوگرا اور دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔

سی این جی ایسوسی ایشن کے صدر خالد لطیف نے سی این جی سیکٹر کے آپریشنز بارے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ چیئرمین اوگرا خالد لطیف نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ 15 سال میں سی این جی کی صنعت میں مجموعی طور پر 450 ارب روپے کی سرمایہ کاری ہوئی جبکہ سی این جی کی صنعت کا فروغ پیٹرول کی درآمد پر خرچ ہونے والے زرمبادلہ پر کنٹرول کیلئے کیا گیا۔ وزیر خزانہ شوکت ترین نے کہا کہ کورونا کے باعث عالمی مارکیٹ میں پیٹرولیم مصنوعات اور ایل این جی کی قیمتیں بڑھی ہیں، تاہم حکومت عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف کی فراہمی کیلئے بڑا بوجھ خود اٹھا رہی ہے جبکہ سی این جی صارفین کیلئے صنعت کو درپیش مسائل حل کریں گے، سی این جی صنعت کے مسائل کے حل کیلئے چیئرمین ایف بی آر، چیئرمین اوگرا اور چیئرمین سی این جی پر مشتمل کمیٹی قائم کر دی ہے۔
خبر کا کوڈ : 956083
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش