0
Thursday 30 Dec 2021 02:52

ایم کیو ایم نے منی بجٹ پر حکومت کو اپنے تحفظات سے آگاہ کردیا

ایم کیو ایم نے منی بجٹ پر حکومت کو اپنے تحفظات سے آگاہ کردیا
اسلام ٹائمز۔ متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان نے منی بجٹ پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے نظرثانی کا مطالبہ کردیا۔ تفصیلات کے مطابق ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما صابر قائم خانی نے کہا کہ حکومت کو کوئی ایسا قدم نہیں اٹھانا چاہیے جس سے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو جبکہ منی بجٹ سے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو مالی سال کے آخر میں اُن  اہداف پر نظرثانی کرنا چاہیے جو حاصل نہیں ہو سکے، منی بجٹ لانے سے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگا کیونکہ پہلے ہی وہ مہنگائی میں پسے ہوئے ہیں جبکہ بے روزگاری بھی عروج پر پہنچ گئی ہے۔ صابر قائم خانی نے کہا کہ ہم نے ابھی تک منی بجٹ کا بل نہیں دیکھا، ایم کیو ایم کا نظریہ ہے کہ سالانہ بجٹ کے بعد منی بجٹ پیش نہیں ہونا چاہیے۔

ایم کیو ایم رہنما نے حکومت کو مشورہ دیا کہ منی بجٹ میں نئے ٹیکسز لگانے یا ٹیکسوں پررعایت ختم کرنے کے بجائے ٹیکس نیٹ کوبڑھایا جائے۔ دریں اثنا ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا، جس میں رہنماؤں اور اراکین نے اسمبلی نے شرکت کر کے  منی بجٹ پر شدید تحفظات کا اظہار کیا گیا۔ ایم کیو ایم ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے اتحادی ہونے کے باوجود منی بجٹ کے حوالے سے اعتماد میں لیا اور نہ ہی کوئی مشاورت کی۔ ایم کیو ایم رہنماؤں نے منی بجٹ کی مخالفت کرتے ہوئے مؤقف اختیار کیا کہ غریب عوام پر کوئی نیا ٹیکس لگانے کے اقدام کو مسترد کر دیا جائے گا۔
خبر کا کوڈ : 971038
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش