0
Sunday 15 May 2022 21:17

سودی نظام کے خاتمے سے قرآن و سنت کا نظام قائم ہوگا، علامہ افضل حیدری

سودی نظام کے خاتمے سے قرآن و سنت کا نظام قائم ہوگا، علامہ افضل حیدری
اسلام ٹائمز۔ وفاق المدارس الشیعہ پاکستان کے سیکرٹری جنرل علامہ محمد افضل حیدری نے کہا ہے کہ سودی نظام کے خاتمے سے قرآن و سنت کا نظام قائم ہوگا۔ وفاقی شرعی عدالت کے تاریخی فیصلے پر عملدرآمد کیلئے فی الفور قانون سازی کی جائے اور عدالت کی طرف سے دیئے گئے روڈ میپ پر عمل درآمد کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ سودی نظام معیشت نے ہمیں آئی ایم ایف کا غلا م بنا دیا، خود انحصاری کی بجائے پاکستان قرضوں کی دلدل میں پھنس گیا ہے۔ اسلام کے پاس نظام خمس و زکوٰة کی شکل میں بہترین معاشی نظام موجود ہے، ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم عوام کو شرعی تقاضوں کے مطابق اپنے مالی واجبات کو ادا کرنے پر آمادہ کریں۔ صاحب نصاب لوگوں پر واجب ہے کہ و ہ زکوٰة اور خمس ادا کرکے معاشرے میں غریبوں کی مدد کریں۔ مساجد، مدارس کے نظام کو مضبوط کریں۔

حوزہ علمیہ جامعۃ المنتظر میں علماء سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے علامہ محمد افضل حیدری نے کہا سودی نظام کے خاتمے سے قرآن مجید کے نظام کا نفاذ ہوگا تو برکت پیدا ہوگی۔ اللہ اور رسول سے جنگ کا خاتمہ کرنے کیلئے سودی نظام کی جگہ اسلامی بینکاری کو رائج کیا جائے۔ اس حوالے سے سیکولر عناصر کے اعتراضات کی حیثیت نہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ شہید آیت اللہ محمد باقر الصدر نے اپنی کتاب ”اقتصادنا“ اسلامی بینکاری کی تشریح کر دی ہے۔ حکومت پاکستان کو شہید باقر الصدر کی تحقیقات سے استفادہ کرنا چاہیئے۔ اس حوالے سے اسلامی جمہوری ایران کے اسلامی نظام معیشت کا بھی مطالعہ کرنا چاہیئے۔
خبر کا کوڈ : 994344
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش