0
Friday 20 May 2022 21:47

کشمیر میں سیکورٹی کی صورتحال دن بدن خراب ہوتی جارہی ہے، عمر عبداللہ

کشمیر میں سیکورٹی کی صورتحال دن بدن خراب ہوتی جارہی ہے، عمر عبداللہ
اسلام ٹائمز۔ جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبداللہ نے کہا کہ سیاحتی سرگرمیوں اور کشمیر کے لئے پروازوں کی تعداد کو حالات کے معمول پر ہونے کی علامت نہیں سمجھا جا سکتا ہے بلکہ سیکورٹی کی صورتحال دن بدن خراب ہوتی جا رہی ہے۔ عمر عبداللہ نے کہا کہ خوف کی کیفیت ایسی ہے کہ کشمیری پنڈت ملازمین اپنی ملازمتیں چھوڑ کر کشمیر سے بھاگنے کو تیار ہیں۔ عمر عبداللہ کا کہنا ہے کہ لڑائیاں اور سیاحت معمول کی علامت نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری پنڈت اپنی نوکری چھوڑنے کو تیار ہیں، کیا یہ معمول ہے؟۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری پنڈت ملازمین نے انصاف کے حصول کے لئے پیپلز الائنس فار گپکر ڈیکلریشن کے رہنماؤں سے ملاقات کی۔
 
انہوں نے کہا کہ گپکار الائینس کے رہنما لیفٹیننٹ گورنر کے پاس گئے تاکہ یہ یقینی بنایا جا سکے کہ پنڈت وادی کشمیر کو نہ چھوڑیں، یہ معمول کی بات نہیں ہے۔ عمر عبداللہ نے حکومت کے اس دعوے پر ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہ کشمیر میں حالات معمول پر آگئے ہیں کیونکہ پتھراؤ میں کمی کے درمیان سیاحوں اور پروازوں کا بہت زیادہ رش ہے، کہا کہ ان کی حکومت نے کئی بار پتھراؤ کو بھی کنٹرول میں لایا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر کوئی ملازم مصروف دفتر میں اپنی ہی سیٹ پر نشانہ بنتا ہے، یا گھر میں پولیس اہلکار مارا جاتا ہے، اگر یہ معمول کا نیا چہرہ ہے، تو میں کچھ نہیں کہہ سکتا۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں افسوس ہے کہ یکے بعد دیگرے بے گناہ لوگ مارے جا رہے ہیں۔
خبر کا کوڈ : 995216
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش