0
Saturday 14 Dec 2019 20:49

یونیورسٹی ہنگامے پر علی نقی عمار کا خصوصی انٹرویو

متعلقہ فائیلیںاسلام ٹائمز۔ اسلامی یونیورسٹی کے ہنگامے کی ایف آئی آر میں نامزد ملزم و سرائیکی اسٹوڈنٹس کونسل کے چیئرمین علی نقی عمار کا خصوصی انٹرویو پیش خدمت ہے۔ جس میں علی نقی عمار کا کہنا ہے کہ ہنگامے والے دن یونیورسٹی میں دو واقعات ہوئے، ایک جس میں وہ خود تشدد کا نشانہ بنے اور اسپتال جا پہنچے اور دوسرا بعد کا واقعہ ہے، جس میں ایک طالب علم جاں بحق اور نو زخمی ہوگئے۔ علی نقی عمار کے مطابق ان پر جھوٹی ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے، ایف آئی آر کے مطابق علی عمار نے چھرے کے ساتھ مرتضیٰ کیانی کو 8 بجکر 40 منٹ پر زخمی کیا جبکہ وہ 7 بجکر 10 منٹ پر پمز اسپتال ایڈمٹ تھے اور اپنے ایکسرے کرا رہے تھے۔ مکمل احوال انٹرویو میں دیکھیں۔
 
خبر کا کوڈ : 832785
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش