0
Saturday 24 Jul 2021 09:50
بھارتی وزیر داخلہ کو استعفٰی دینا چاہیئے

راہل گاندھی کی مودی حکومت کے ذریعے پگاسس جاسوسی کو لیکر پریس کانفرنس

پگاسس ایک ہتھیار ہے جسے اسرائیل سے صرف حکومتیں خرید سکتی ہیں
متعلقہ فائیلیںاسلام ٹائمز۔ انڈین نیشنل کانگریس کمیٹی کے سابق صدر راہل گاندھی نے کہا ہے کہ فون ٹیپنگ کرنا ایک ہتھیار ہے اور مودی حکومت نے یہ ہتھیار اپوزیشن اور پارلیمانی اداروں کے خلاف استعمال کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ "پگاسس" ایک ہتھیار ہے، جو اسرائیل سے صرف حکومتیں خرید سکتی ہیں اور یہ ہتھیار دراصل دہشتگردوں کے خلاف استعمال ہوتا ہے لیکن یہاں صحافیوں اور پارلیمانی اداروں کی جاسوسی کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کام وزیر داخلہ امت شاہ کے بغیر نہیں ہوسکتا، لہذا انہیں چاہیئے کہ وہ استعفٰی دیں۔ راہل گاندھی نے جمعہ کو یہاں پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر صحافیوں کو بتایا کہ ان کا فون بھی ٹیپ ہوا ہے، اسی طرح بہت سے دوسرے لوگوں کے فون ٹیپ کئے گئے ہیں، اس معاملے میں عدالتی تحقیقات ضروری ہیں۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نریندر مودی اور وزیر داخلہ امت شاہ کی سفارش کے بغیر فون ٹیپنگ کا کام ممکن نہیں ہے، لہذا وزیر داخلہ کو پہلے اس معاملے میں استعفیٰ دینا چاہیئے اور سپریم کورٹ کے جج کی نگرانی میں وزیراعظم کے رول کی بھی غیر جانبدارانہ جانچ ہونی چاہیئے۔ کانگریس لیڈر نے کہا کہ اس طرح کے کام کو اسرائیل میں "ہتھیار" کہا جاتا ہے اور مودی حکومت نے اس ہتھیار کو آئینی اداروں، حزب اختلاف کے رہنماؤں اور سلامتی سے متعلق ممتاز لوگوں کے خلاف استعمال کیا ہے، لہذا اس کی تحقیقات کی ضرورت ہے۔ پریس کانفرنس کی تفصیلات آپکی خدمت میں پیش ہیں۔ قارئین محترم آپ اس ویڈیو سمیت بہت سی دیگر اہم ویڈیوز کو اسلام ٹائمز کے یوٹیوب چینل کے درج ذیل لنک پر بھی دیکھ اور سن سکتے ہیں۔ (ادارہ)
https://www.youtube.com/c/IslamtimesurOfficial/videos
خبر کا کوڈ : 944757
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب
ہماری پیشکش