0
Friday 20 Apr 2012 16:40

گندم کی خريداری تا حال شروع نہ ہونے پر کاشتکار پريشان

گندم کی خريداری تا حال شروع نہ ہونے پر کاشتکار پريشان
اسلام ٹائمز۔ صوبہ سندھ کے ضلع گھوٹکی ميں محکمہ خوراک کی غفلت اور لاپرواہی کے باعث گندم کی خريداری ابھی تک شروع نہيں جاسکی، جس سے کاشتکار پريشان ہيں۔ ضلع گھوٹکی ميں گندم کے سيزن کا آغاز ہوئے پندرہ دن گذر چکے ہيں مگر محکمہ خوراک کی لا پرواہی غفلت اور مبينہ بدعنوانی کے باعث نہ تو خريداری مراکز قائم کئے جاسکے اور نہ ہی گندم کی خريداری شروع کی جاسکی ہے، جسکی وجہ سے کاشتکار سرکاری نرخ 1050 روپے فی من کی بجائے 950 روپے فی من اوپن مارکيٹ ميں فروخت کرنے پر مجبور ہيں جبکہ ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر سرفراز کمنگر کے مطابق گندم کی خريداری جلد شروع کردی جائے گی اور ضلع بھر ميں 28 سرکاری خريداری کے مراکز بنائے جائيں گے۔ اس سال 17 لاکھ بوری خريدنے کا ہدف رکھا گيا ہے جبکہ گذشتہ سال خريداری کا ہدف 21 لاکھ بوری تھا۔
خبر کا کوڈ : 154985
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے