0
Friday 11 Jan 2013 23:50

سانحہ کوئٹہ کے خلاف کراچی میں ایم ڈبلیو ایم نے احتجاجی مظاہروں کا انعقاد کیا

سانحہ کوئٹہ کے خلاف کراچی میں ایم ڈبلیو ایم نے احتجاجی مظاہروں کا انعقاد کیا
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین کراچی ڈویژن کی جانب سے کراچی اور کوئٹہ میں شیعہ نسل کشی کے خلاف بعد نماز جمعہ اور بعد نماز مغربین احتجاجی مظاہروں کا انعقاد کیا گیا۔ کراچی میں بعد نماز جمعہ کھارادر میں مظاہرہ کیا گیا اور بعد ازمغربین جعفر طیار میں ریلی کا انعقاد کیا گیا جبکہ مرکزی احتجاجی ریلی خراسان سے نمائش چورنگی تک نکالی گئی۔ ریلی میں سینکڑوں کی تعداد میں مظاہرین نے شرکت کی جو ہاتھوں میں بینر پلے کارڈ اور پرچم اٹھائے ہوئے تھے۔ مظاہرین امریکہ اسرائیل اور ان کے مقامی ایجنٹ دہشت گردوں کے خلاف شدید نعرے بازی کر رہے تھے۔ احتجاجی مظاہرے سے مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے سیکریٹری جنرل مولانا صادق رضا تقوی، مولانا محمد حسین کریمی، آغا مبشر حسن، مولانا منور علی نقوی، آئی ایس او کے رکن ذیلی نظارت مولانا عقیل موسیٰ، مولانا رحمت علی سولنگی اور مولانا فتح علی و دیگر نے خطاب کیا۔

اس موقع پر رہنماؤں کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کسی بھی شکل میں ہو ہم نے اس کی ہمیشہ مخالفت کی ہے، ملک و ملت دشمن یہ سامراجی ایجنٹ کبھی مساجد میں، کبھی امام بارگاہوں میں، کبھی مزارات میں، کبھی بازاروں میں بم دھماکے کرکے بیگناہ مسلمانوں کو اگ و خون میں غلطاں کرتے رہے، ہم چلاتے رہے دہشت گردوں کو بے نقاب کرتے رہے لیکن کسی نے ہماری ایک نہ سنی اور آج ان دہشت گردوں کے ہاتھ پاکستان کی محافظ قوتوں تک پہنچ گئے قانون نافذ کرنے والے اداروں کی دہشت گردوں پر گرفت کمزور ہو رہی ہے۔

مقررین نے کہا کہ ملک بھر میں امریکہ اور اسرائیل کے مقامی ایجنٹ تکفیری دہشت گرد ٹولہ مسلمانوں کا قتل عام کر رہا ہے اور کوئٹہ میں علمدار روڈ پر ہونے والی وحشت ناک دہشت گردانہ کاروائی کا مقصد مملکت خداداد پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنا ہے تاہم ملت جعفریہ شہداء کے خون کو رائیگاں نہیں جانے دے گی اور سرزمین پاکستان سے امریکہ و اسرائیل کے ایجنٹ دہشت گرد گروہوں کو ان کے ناپاک اور اسلام دشمن عزائم میں کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا۔ مقررین نے کہا کہ حکومت بری طرح ناکام ہو چکی ہے جبکہ ملک بھر میں کالعدم دہشت گرد تنظیموں اور امریکی و اسرائیلی گماشتوں کی عملاً حکمرانی قائم ہو چکی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کوئٹہ میں 90 سے زائد شیعہ سنی مسلمانوں کا قتل عام اور ملک بھر میں جاری شیعہ مسلمانوں کی نسل کشی ایک ہی سازش کی کڑیاں ہیں، جس کا مقصد ملت جعفریہ پاکستان کو دیوار سے لگانا ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ ریاستی اداروں کی سرپرستی میں پروان چڑھنے والی دہشت گرد تنظیمیں پاکستان میں مظلوم اور معصوم انسانوں کا قتل عام کر رہی ہیں جبکہ ان دہشت گردوں کی سرکوبی کرنے والے ریاستی ادارے اور حساس ادارے ان کی سرپرستی کر رہے ہیں۔ رہنماؤں نے کوئٹہ میں علمدار روڈ پر ہونے والی ہولناک دہشت گردی کی سخت الفاظ میں مذمت کی اور سانحہ علمدار روڈ میں شہید ہونے والے تمام شہداء کے اہل خانہ اور زخمیوں سے بشمول میڈیا کے نمائندوں، پولیس افسران اور اہلکاروں سمیت رضاکاروں سے دلی ہمدردی اور گہرے دکھ کا اظہار کیا اور کہا ہے کہ پاکستان اور اسلام کے دشمن چاہتے ہیں کہ پاکستان کو تباہ و برباد کر دیا جائے اسی لئے بانیان پاکستان کی اولادوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔
خبر کا کوڈ : 230274
رائے ارسال کرنا
آپ کا نام

آپکا ایمیل ایڈریس
آپکی رائے

منتخب